صرف عمارت بنانے سے تعلیمی معیار بہتر نہیں ہو سکتا: شوکت علی یوسفزئی 

صرف عمارت بنانے سے تعلیمی معیار بہتر نہیں ہو سکتا: شوکت علی یوسفزئی 

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ معیاری تعلیم مہیا کرنا صوبائی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے صوبے میں 57000 ہزار اساتذہ میرٹ پر بھرتی کیے۔ انہوں نے کہا کہ صرف بلڈنگ بنانے سے تعلیمی معیار بہتر نہیں ہوتا۔سابق حکومتوں نے صرف سکولوں کی عمارت بنائیں لیکن ان سکولوں کو فعال کرنے کے بارے میں نہیں سوچا۔ پی ٹی آئی کی حکومت نے سکولوں میں اساتذہ کی حاضری یقینی بنانے کے لیے انڈیپینڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ قائم کیے۔ وہ پشاور میں یو این ڈی پی کے زیر اہتمام دو روزہ پراونشل یوتھ اینگجمنٹ کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے اعلیٰ تعلیم خلیق الرحمان، معاون خصوصی برائے جیل خانہ جات تاج محمد ترند،ممبران صوبائی اسمبلی اور طلباء نے بھی کانفرنس میں شرکت کی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ تعلیمی معیار کو بہتر کرنے کے لیے نصاب کو دور جدید کے تقاضوں کے مطابق کرنا ہو گا جس کے لیے مثبت اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ نصاب میں ایسی چیزیں شامل کی جائیں گی جس سے طلباء کو مستقبل میں فائدہ پہنچے گا۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم کے ساتھ ساتھ اپنی زبان کو بھی ترقی دینا اور طلباء کے بہتر مستقبل کے لیے ان کی کونسلنگ بہت ضروری ہے۔ طلباء اپنے علاقے اور حالات کے مطابق وہ تعلیم حاصل کریں جس سے ان کو فائدہ پہنچے۔ شوکت یوسفزئی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے عوام میں حق کے لیے آواز اٹھانے کا شعور پیدا کیا اور شعور رکھنے والی قومیں ترقی کرتی ہیں۔ عوامی ووٹ سے منتخب ہونے والوں کو عوام کے سامنے جوابدہ ہونا چاہیے۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت سے پہلے 10 10 سالوں تک اقتدار میں رہنے والوں نے عوام کیلئے کچھ نہیں کیا اور نا عوام کے سامنے خود کو جواب دہ سمجھا۔ پاکستان تحریک انصاف عوام کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لیے اقدامات اٹھا رہی ہے۔

مزید : صفحہ اول