ماں‘بیٹا سمیت 3افراد قتل‘2نے خود کشی کرلی

  ماں‘بیٹا سمیت 3افراد قتل‘2نے خود کشی کرلی

  



کوٹ ادو‘قصبہ کالا‘ رحیم یار خان (تحصیل رپورٹر‘ نمائندہ پاکستان‘بیورو رپورٹ) ماں بیٹا سمیت 3افراد کو قتل کردیا گیا‘ جبکہ 2نے خود کشی کرلی‘ تفصیل کے مطابق پسند کی شادی کرنے کی رنجش،ڈیڑھ سال بعد بیٹی کو ایک ماہ کے نواسے سمیت اغواء کرکے گھر (بقیہ نمبر14صفحہ12پر)

لے جانے والے سفاک والد نے بیٹوں سے ملکر بیٹی اور نواسے کو قتل کردیا،اطلاع پرڈی ایس پی، ایس ایچ او کوٹ ادوبھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے، نعش کو قبضہ میں لیکر پوسٹمارٹم کے بعد خاوند کے حوالے،کارائی کا آغاز کردیا،اس بارے تفصیل کے مطابق تھانہ کوٹ ادو کے علاقہ بستی سمندری موضع منہاں کے رہائشی فداحسین گورمانی کے بیٹے مختیار حسین گورمانی نے علی پور کے رہائشی عبدالقیوم راجپوت کی بیٹی ایمن بی بی سے ڈیڑھ سال قبل کورٹ میرج کی تھی،جس کے بطن سے ایک ماہ کا بیٹا حسین علی بھی تھا،ڈیڑھ سال بعد عبدالقیوم 3قبل کوٹ ادو میں ان کے گھر اپنے بیٹوں محمد احمد قیوم،اویس،فاروق سمیت دیگر ساتھیوں اسلم بھٹہ،شان مصطفی عرف ہریرہ 4نامعلوم کے ہمراہ مسلح آتش اسلحہ دھاوا بول دیااور گن پوائنٹ پر بیٹی ایمن بی بی اور ایک ماہ کے اس کے بیٹے حسین علی سمیت اسے اٹھا کر کار میں ڈال کر فرارہوگئے تھے، جبکہ چھڑانے پر مختیار حسین کی والدہ صغراں بی بی اس کی بیٹی فضا بی بی اور ندیم گورمانی کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا تھا جس کا پولیس نے عبدالقیوم سمیت اس کے بیٹوں محمد احمد قیوم،اویس،فاروق سمیت دیگر ساتھیوں اسلم بھٹہ،شان مصطفی عرف ہریرہ 4نامعلوم کے خلاف مقدمہ نمبر92/20زیردفعہ/363365درج کرلیاتھا،گزشتہ روز والدعبدالقیوم نے اپنے گھر علی پور میں اپنے بیٹوں محمد احمد قیوم،اویس،فاروق ودیگر کے ہمراہ بیٹی ایمن بی بی کوایک ماہ کے نواسے حسین علی سمیت دونوں کو قتل کرکے انکی نعشیں دفنا دیں،وقوعہ کی اطلاع پر ایس ڈی پی او کوٹ ادو سید اعجازحسین بخاری،ایس ایچ اوکوٹ ادو افتخار عرفان کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے جہاں انہوں نے دونوں ماں بیٹے کی نعش کو برآمد کراکے قبضہ میں لے لیا،نعشوں کے پوسٹمارٹم کے بعد اس کے خاوند مختیار حسین گورمانی کے حوالے کردی،پولیس نے کاروائی کا آغاز کردیا ہے۔ تھانہ صدر ڈی جی خان کے علاقہ میں زمین کے تنازعہ پر دوطرفہ فائرنگ سے شادن لنڈ کا نوجوان غلام یسین ولد محمد سلیمان یارانی گولی لگنے سے موقع پر جانبحق، متعدد افراد کی زخمی ہونے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔ تھانہ کالا کے علاقہ میں نوجوان نے گھریلو جھگڑے پر خودکشی کرلی۔تفصیلات کے مطابق تھانہ کالا کے علاقہ چک لماں میں 21 سالہ نوجوان محمد ابراہیم ولد غلام حسین جموا نی نے گھریلو جھگڑے پر گولی مار کر خود کشی کرلی زخمی کو شادن لُنڈ ہسپتال لایا گیا جہاں فرسٹ ایڈ کے بعد ڈراما سنٹر ڈیرہ غازیخان منتقل کردیا گیا جہاں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ دیا قانونی کارروائی کے بعد ڈیڈ باڈی ورثا کے حوالے کردی گئی۔ گھریلو جھگڑوں سے دلبرداشتہ ہوکر 22 سالہ نوجوان نے کالاپتھر پی کرخودکشی کرلی‘ 5 کا اقدام خود کشی۔ تفصیل کے مطابق راجن پور کے رہائشی 22 سالہ نجمل حسن نے آئے روز کے گھریلو جھگڑوں سے دلبرداشتہ ہوکر کالا پتھر پی لیا‘ حالت غیر ہونے پرورثاء نے طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود نجمل حسن جانبر نہ ہو پایا اور دم توڑ گیا جبکہ اقدام خودکشی کرنے والے 5 افراد راجن پور کی 20 سالہ مہوش بی بی‘ رکن پور کی 18 سالہ انابیہ بی بی‘ کوٹ فقیرا کی 16 سالہ خالدہ بی بی‘ امین گڑھ کا 18 سالہ محمد رمضان اور پلوشاہ کا رہائشی 20 سالہ محمد ارشد کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

قتل /خود کشی

مزید : ملتان صفحہ آخر