حکومت ملک میں سرمایہ کاری کےلئےکیا اقدامات کررہی ہے؟چیئرمین پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ نےخوشخبری سنادی

حکومت ملک میں سرمایہ کاری کےلئےکیا اقدامات کررہی ہے؟چیئرمین پنجاب بورڈ آف ...
حکومت ملک میں سرمایہ کاری کےلئےکیا اقدامات کررہی ہے؟چیئرمین پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ نےخوشخبری سنادی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سرمایہ کاروں کی سہولیات کے پیش نظر اکنامک زون پر کام جاری ہے ،اب وہ وقت دور نہیں جب وزیراعظم پاکستان عمران خان کا خواب حقیقت میں تبدیل ہو گا ،اس خواب   کو  پورا کرنے کے لئےسرمایہ کار  اہم کردار ادا کر رہے ہیں،ملکی ترقی اور معاشرے کی فلاح و بہبود میں میڈیا کا کردار اپنی مثال آپ ہے ۔

ان خیالات کااظہارچیئرمین پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ اینڈٹریڈسردارتنویر الیاس خان نےمعروف کاروباری شخصیات،سنئیرصحافیوں اوراینکر پرسنز کے اعزاز میں دئیے گئے ایک عشائیے کے موقع پر کیا ۔سردارتنویر الیاس خان نے کہا کہ ہماری تاجر برادری پنجاب اور ملک بھر میں سرمایہ کاری میں دلچسپی لے رہی ہے،ان سرمایہ کاروں کو سہولیات فراہم کرنے کے لیے پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ کا ادارہ موجود ہے ،سی ای او پی بی آئی ٹی جہانزیب برانہ نے اس ضمن میں بہت اہم اقدامات کیے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کی سربراہی میں مختلف اضلاع میں سپیشل اکنامک زون بناے جا رہے ہیں جس سے پنجاب میں سرمایہ کاری کو فروغ ملے گا،ملک  میں غیر  ملکی سرمایہ کاری لانے کے لئےوزیراعظم پاکستان عمران خان کی ہدایات پر عمل پیرا ہیں،ہاؤسنگ کے شعبے میں بھی سرمایہ کاری لانے پر کام جاری ہے ۔

سردار تنویر الیاس خان نے کہا کہ بیرونی سرمایہ کاری میں حالیہ اضافہ خوش آئند ہے، اسے ملک میں مختلف شعبوں پر پھیلانا ہوگا جس کے لئے سرمایہ کاروں کو کاروبار میں آسانیاں پیدا کرکے دینے کے ساتھ انفر اسٹرکچر میں بہتری اور دنیا میں پاکستان کا مثبت تاثر اجاگر کرنے کی اشد ضرورت ہے،اس ضمن میں صحافی برداری بہت اہم کردار ادا کر رہی ہے اور امید کرتا ہوں کہ ملکی معاشی ترقی کے لیے ہم سب ملکر اپنا اپنا مثبت کردار ادا کرتے رہیں گے،سرمایہ کاری کے میدان میں اگر کہیں بھی مشکل پیش آے تو پبٹ کا ادارہ موجود ہے اور ذاتی حثیت میں میرے دروازے ہر وقت کھلے ہیں ۔ اس موقع پر ملاقات میں راجہ صفدر، منظور احمد ملک، چوہدری خلیل احمد، سی ای او پبٹ جہانزیب برانہ، مولانا عبدالخبیرآزاد ، نصراللہ ملک، حبیب اکرم،سردار عمر تنویر، محسن فیروز، رئیس انصاری، خالد شہزاد فاروقی،احمد ولید، عمران یعقوب، رضوان رضی، علی ممتاز اور محمد عثمان بھی موجود تھے۔

مزید : بزنس