’اٹلی کی وجہ سے 14 اور ایران سے 11 ملکوں میں کرونا وائرس پھیلا‘ ڈبلیو ایچ او کے سربراہ کا انکشاف

’اٹلی کی وجہ سے 14 اور ایران سے 11 ملکوں میں کرونا وائرس پھیلا‘ ڈبلیو ایچ او کے ...
’اٹلی کی وجہ سے 14 اور ایران سے 11 ملکوں میں کرونا وائرس پھیلا‘ ڈبلیو ایچ او کے سربراہ کا انکشاف

  



جنیوا (ڈیلی پاکستان آن لائن) ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈ روز کا کہنا ہے کہ چین میں کرونا وائرس کے کیسز میں کمی آئی ہے تاہم بیرون ممالک ان میں اضافہ تشویشناک ہے، اٹلی کی وجہ سے 14 اور ایران کی وجہ سے 11 ممالک میں کرونا وائرس منتقل ہوا۔

کرونا وائرس کے حوالے سے روزانہ کی اپ ڈیٹ دیتے ہوئے ڈاکٹر ٹیڈ روز نے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران چین میں کووِڈ 19 کے 329 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، یہ تعداد گزشتہ ایک ماہ کی کم ترین ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چین میں مجموعی طور پر 78 ہزار 959 لوگوں میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 2 ہزار 791 ہوچکی ہے۔ چین کے علاوہ کرونا وائرس 49 ممالک تک پھیل چکا ہے جہاں اس کے 4 ہزار 351 کنفرم کیسز سامنے آئے ہیں اور ہلاکتوں کی تعداد 67 ہوگئی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ نے بتایا کہ جمعرات کے روز ڈنمارک، ایسٹونیا، لتھوانیا، نیدر لینڈز اور نائجیریا وہ ممالک تھے جن میں کرونا وائرس کا پہلا کیس رپورٹ ہوا ہے، ان تمام کیسز کا تعلق اٹلی سے ہے۔

ڈاکٹر ٹیڈ روز کے مطابق اٹلی سے 14 ممالک میں کرونا وائرس کے 24 کیسز منتقل ہوئے ہیں جبکہ ایران سے 11 ممالک میں کووِڈ 19 کے 97 کیسز منتقل ہوئے ہیں۔ گزشتہ کچھ دنوں کے دوران متاثرین اور متاثرہ ممالک کی تعداد میں اضافہ تشویشناک ہے۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /بین الاقوامی