افغانستان میں امریکی فوجیوں کا ناشتہ ”بند“ ہو گیا

افغانستان میں امریکی فوجیوں کا ناشتہ ”بند“ ہو گیا
 افغانستان میں امریکی فوجیوں کا ناشتہ ”بند“ ہو گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی محکمہ دفاع نے افغانستان میں تعینات اپنے فوجیوں کے خوراک الاﺅنس میں کٹوتی کرتے ہوئے ناشتہ فراہم کرنا بند کر دیا ہے۔ اخراجات کٹوتی منصوبے کے تحت پینٹاگون کی جانب سے ہزاروں فوجیوں کو تیار ناشتے کی فراہمی پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ فوجی حکام کا کہنا ہے کہ یہ پابندی یکم جنوری سے لاگو ہے جس سے فرنٹ لائن پر تعینات 2700 فوجی شدید متاثر ہوئے ہیں۔ حکام کے مطابق ان تمام فوجیوں کو اب پکا پکایا ناشتہ نہیں ملے گا بلکہ انہیں متبادل خوراک کا خود بندوبست کرنا ہوگا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -