فیڈریشن کو متحرک بنا کر معیشت کی بحالی کی راہ پر ڈال دیا جائیگا،صدر ایف پی سی سی آئی

فیڈریشن کو متحرک بنا کر معیشت کی بحالی کی راہ پر ڈال دیا جائیگا،صدر ایف پی سی ...

 فیصل آباد (بیورورپورٹ)وفاق ایوان ہائے صنعت وتجارت پاکستان کے صدر میاں محمد ادریس نے کہاہے کہ مشاورت کے ذریعے فیڈریشن کو متحرک، فعال اور مؤثر ادارہ بنا کر رواں سال کے دوران ہی معیشت کی بحالی کی راہ پر ڈال دیا جائیگا۔فیصل آباد میں ایک تقریب سے خطاب کے دوران انہوں نے کہاکہ فیڈریشن کا انتخاب جیت کر انہوں نے معیشت کی بحالی کی سمت پہلا قدم اٹھا لیا ہے جبکہ اب ان کی کوشش ہوگی کہ حکومت ، حکومتی اداروں اور تاجروں کو ایک پلیٹ فارم پر لاکر مثبت معاشی منصوبہ بندی کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ وہ پہلے ہی 2015 ء کو معیشت کی بحالی کا سال قرار دے چکے ہیں اس سلسلہ میں فیڈریشن کے عہدیداروں اور ممبرایسوسی ایشنوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ برآمدات بڑھانے، براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری لانے اور توانائی بحران کے حل کیلئے ایک ہفتہ کے اندر اندر تجاویز دیں تا کہ ان کی روشنی میں حکومت سے معیشت کی بحالی کے مئلہ پر بات چیت شروع کی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ خکومت کومعیشت کی بحالی کیلئے نجکاری کی پالیسی کو واضح اور مکمل طور پر ملک و قوم کے بہترین مفاد میں نافذ کرنا ہوگا۔ فیصل آباد کے مسائل کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیاسی اور تاجر قیادت کو ایک پلیٹ فارم پر متحد ہو کر فیصل آباد کی ترقی کیلئے مشترکہ اور متفقہ ایجنڈا تیار کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی تاجر اور صنعتکار انفرادی طور پر اپنی سوشل کارپوریٹ ذمہ داریوں کے تحت مختلف منصوبوں پر کام کر رہے ہیں جن کو منظم اور مربوط کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ فیصل آباد قومی خزانہ کو ٹیکسوں کی مد میں بڑی رقوم دے رہا ہے مگر اس تناسب سے اسے ترقیاتی فنڈ نہیں مل رہے۔ انہوں نے کہا کہ مقامی مسائل کے حل کیلئے فیسکو کی طرح تمام حکومتی اور سرکاری اداروں میں فیصل آباد کے تاجروں کو نمائندگی ملنی چاہیے۔ انہوں نے سیالکوٹ کے تاجر ریاض الدین شیخ کا خاص طور پر ذکر کیا جنہوں نے حکومت کی مدد کے بغیر سیالکوٹ کی ترقی میں بھرپور کردار ادا کیا ہے۔تقریب سے خطاب کے دوران ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان (ٹی ڈی اے پی)کے چیف ایگزیکٹوآفیسر ایس ایم منیر نے فیڈریشن پر 20 سال سے مسلط غیر نمائندہ تاجر گروپ کے خلاف جد و جہد کا ذکر کیا اور کہا کہ تاجروں کے مسائل کے نہ حل ہونے میں یہ ایک بہت بڑی رکاوٹ تھی جو اب دور ہو گئی ہے۔ انہوں نے اس سلسلہ میں یونائیٹڈ بزنس گروپ کے قیام کا بھی حوالہ دیا اور کہا کہ اگر وزیر اعظم معیشت کو بحال کرنا چاہتے ہیں تو انہیں ملک کے 50 اہم اداروں کی مینجمنٹ تاجروں کو سونپنی ہو گی۔ انہوں نے پاکستان کی 25 ارب ڈالر کی برآمدات کا ذکر کیا اور کہا کہ یہ پاکستان کی استعداد کے حوالے سے بہت کم ہے اگر حکومت برآمدات کوحقیقی معنوں میں زیرو ریٹڈ کر دے اور سیلز ٹیکس کی مد میں تاجروں سے وصول کئے جانے والے 102 ارب روپے انہیں واپس کر دے تو برآمدات کو فوری طور پر 3 گنا کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پر اچھا وقت آنے والا ہے ۔ تقریب سے یونائیٹڈ بزنس گروپ کے رہنما افتخار علی ملک نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ تاجروں اور معیشت سے متعلقہ مسائل کے حل کیلئے تھنک ٹینک بنایا جائیگا۔ انہوں نے پاکستان سے ہونے والے برین ڈرین کو روکنے کی ضرورت پر بھی زور دیا اور کہا کہ ہم نے 30لاکھ افغانستانیوں کی مہمان نوازی کی ہے اب جبکہ ان کی واپسی متوقع ہے اس لئے ہمیں انہیں ہنر سکھانا ہونگے تا کہ وہ اپنے وطن واپس جا کر نہ صرف اپنے اور اپنے وطن کیلئے کما سکیں بلکہ ان کے ذریعے پاکستان اور افغانستان کے درمیان تجارت کو بھی بڑھایا جائے۔ قومی اسمبلی کے رکن میاں عبدالمنان نے کہا کہ پی آئی اے کو اگلے سال 14 جہاز ڈرائی لیز پر مل جائیں گے جس کے بعد فیصل آباد کیلئے پی آئی اے کا پرانا شیڈول بحال ہو جائیگا جس کے تحت روزانہ2 پروازوں کے علاوہ ایک ہفتہ وار بین الاقوامی پرواز بھی بحال ہو جائے گی۔ سیلز ٹیکس ری فنڈ کیلئے انہوں نے یقین دلایا کہ وہ اگلے ہفتے ہی وزیر اعظم سے بات کرینگے کیونکہ ریفنڈ کی ادائیگی سے نہ صرف برآمدات میں اضافہ ہوگا بلکہ پاکستان کی معیشت بھی مضبوط ہوگی۔ تقریب سے نیشنل گروپ کے سربراہ میاں جاوید اقبال فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کے صدر انجینئر رضوان اشرف نے بھی خطاب کیا اور میاں محمد ادریس کی کامیابی پر یونائیٹڈ بزنس گروپ اور ملک بھر کی تاجر برادری کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر عمران غفور کے بیٹے کی سالگرہ کا کیک بھی یونائیٹڈ بزنس گروپ کے لیڈروں نے مشترکہ طور پر کاٹا۔ تقریب میں فیڈریشن کے ملک سہیل، خواجہ ضرار ، فہمیدہ جمالی، میاں زاہد انوار، فیصل آباد چیمبر کے سینئر نائب صدر ندیم اللہ والا، نائب صدر انعام افضل خان نے بھی شرکت کی۔

مزید : کامرس