26جنوری پرمکمل ہڑتال ریفرنڈم اور بھارت کیلئے چشم کشا: شبیر شاہ

26جنوری پرمکمل ہڑتال ریفرنڈم اور بھارت کیلئے چشم کشا: شبیر شاہ

 سرینگر(کے پی آئی)حریت کانفرنس جے کے کے رہنما اور ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی سربراہ شبیر احمد شاہ نے بھارتی یوم جمہوریہ کے موقع پر ریاستی عوام کی جانب سے مکمل ہڑتال اور احتجاجی مظاہرے کرنے پر ان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے مواقع پر موثر عوامی ردعمل بھارتی رہنماﺅں کیلئے چشم کشا ہے ۔ شبیر شاہ نے عوامی احتجاج اور ہڑتال کو ایک ریفرنڈم قرار دیتے ہوئے کہا کہ خطے میں بندوق اور 8لاکھ فوجیوں کے سائے میں اس طرح کی تقریبات منانا کوئی اہمیت نہیں رکھتا۔ انھوں نے اس بات پرتاسف کا اظہار کیا کہ فوجی اور مقامی حکام کی جانب سے ساری وادی کو ایک فوجی چھاونی میں تبدیل کیا گیا اور اس دوران عام شہریوں اور انتہائی علیل لوگوں کو طبی سہولیات کے عدم دستیابی کی وجہ سے بے انتہا مصائب کا شکار ہونا پڑا۔شبیر شاہ نے ریاست میں بے جا فوجی بندشوں اورقدغنوں کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح ساری ریاست کو ایک بڑے جیل میں تبدیل کرکے یہ دن منانا کوئی معنی نہیں رکھتا۔

شبیر شاہ نے کہا کہ اس طرح کے فوجی سائے میں یہ دن منانے سے یہ واضح ہوگیا کہ یہاں کے عوام پر لاکھ ستم ڈھانے کے باوجود بھی ان کے دلوں میں موجود جذبے کو ختم کیا جانا ممکن نہیں اور برعکس اس کے یہا ںکے عوام پر ڈھائے جارہے بھارتی ظلم و ستم کی داستان کسی نہ کسی طرح عالمی برادری کے نظروں سے گزرتی ہی۔ شبیر شاہ نے سانحہ کپوارہ کے شہدا کو ان کی 21ویں برسی پر خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ 27جنوری 1994کو فوج نے سرحدی قصبہ کپوارہ میں 27معصوم شہریوں کی جان صرف اس وجہ سے لی کہ کپوارہ کے غیورعوام نے ایک دن قبل 26جنوری کو احتجاج کے طور اپنی دکانیں بند رکھی تھیں اور احتجاج کیا تھا۔شبیر احمد شاہ نے شہدا کپوارہ کو دل کی عمیق گہرائیوں سے خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ لاکھ ستم ڈھانے اور بھارتی ظلم و جبر کے باوجود کاروان آزادی کا یہ سفرجاری و ساری رہے گا۔7جنوری منگلوار کو شہدا کپوارہ کی یاد میں ضلع کپوارہ اور گرد نواح میں ہڑتال کی اپیل دوہراتے ہوئے شبیر احمد شاہ نے کہا کہ اس روز شہدا کے ایصال ثواب کے لئے اجتماعی دعائیہ مجالس کا انعقاد کیا جائے گا۔

مزید : عالمی منظر