نالوں پر پختہ تعمیرات گرانے کیلئے آپریشن شروع ،ڈی سی او کے اکاؤنٹ میں99کروڑ روپے منتقل

نالوں پر پختہ تعمیرات گرانے کیلئے آپریشن شروع ،ڈی سی او کے اکاؤنٹ میں99کروڑ ...

 لاہور(جاوید اقبال) واسا نے ڈرینوں پر پختہ تعمیرات گرانے کیلئے ایکشن پلان جاری کر دیا گیا ہے جس کے تحت لاہور بھر میں ڈرینوں پر تجاوزات کو گرانے کے لئے آپریشن شروع کرنے کے لئے عملی طور پر کام شروع کر دیا گیا ہے جس کا ٹاسک ڈی ایم ڈی انجینئر نگ آفتاب ڈھلوں کو دے دیا گیا ہے اور اس مقصد کے لئے ایسے مالکان جن کی جائیدادیں نالوں کے کنارے قائم ہیں اور وہ رجسٹریاں رکھتے ہیں ان مالکان کوادائیگی کے لئے 99کروڑ روپے ڈی سی او لاہور کے اکاؤنٹ میں منتقل کروا دیئے گئے ہیں ۔ لاہور بھر کی ڈرینوں کو کشادہ کرنے کے لئے جوجائیداد یں اس آپریشن کی زد میں آئیں گی ان کے مالکان کو زمین کی سرکاری قیمت کے حساب سے ادا ئیگی کی جائے گی آغاز برڈ ووڈروڈ ڈرین سے کیا جارہا ہے موجودہ نالے کی چوڑائی 5سے 6فٹ رہ چکی ہے جو کہ اب تجاوزات گرا کر 18سے 25فٹ تک کی جائے گی۔ بتایا گیا ہے کہ لاہور بھر کی ڈرینوں کو کشادہ کر کے سیوریج اور برساتی پانی کی بروقت روانگی کو یقینی بنانے اور نالوں پر تعمیر ہونے والی قانونی و غیر قانونی تعمیرات کو مسمار کرنے کے لئے آپریشن شروع کرنے کی منظوری ایم ڈی نصیر چودھری نے حاصل کی۔ ایم ڈی نے وزیر اعلیٰ پنجاب کو بھجوائی گئی سمری میں موقف اختیار کیا کہ نالوں پر ایسی تعمیرات جوقانونی ہیں اور ان کے مالکان کے پاس باقاعدہ رجسٹریاں ہیں ان کی وہ جائیداد جو اس کی زد میں آتی ہیں اس کو مالکان سے خریدا جائے اور ریکوزیشن کی قیمت موجود ہ علاقے میں مارکیٹ ویلیو کے حساب سے ادا کی جائے جس کی نہ صرف وزیر اعلیٰ نے منظوری دے دی بلکہ اس کے لئے اڑھائی ارب روپے واسا کو جاری کر دیئے جن میں سے 99کروڑ روپے آپریشن کلین اپ کی زد میں آنے والے جائیدادوں کے مالکان کو ادا کرنے کے لئے ایم ڈی واسا نے ضلعی انتظامیہ کے اکاؤنٹ میں منتقل کر دیئے ہیں بتایا گیا ہے کہ ابتدائی طور پر تین ڈرینوں برڈ ورڈ روڈ کنٹونمنٹ بورڈ ڈرین سنٹرل ڈرین کو کلیئر کر دیا جائے گا جس کے لئے واسا کے ریونیو کے عملہ نے ان ڈرینو ں پر سروے شروع کر دیا ہے اور آج سے پٹواری پیمائش کر کے نشان لگانے کا سلسلہ شروع کریں گے جس کے بعد مالکان کو اپنی مدد آپ کے تحت نالوں پر موجود جائیدادوں کو گرانے کے لئے 10دن کا وقت دیا جائے گا، اس سلسلے میں ایم ڈی واسا نصیر چودھری کا کہنا ہے کہ کوشش کی جائے گی کہ شہریوں کا نقصان کم سے کم ہو اور ایسے شہری جنہوں نے نالوں کے اوپر سرکاری زمین پر قبضے کر رکھے ہیں ان کی جائیدادیں مسمار کر کے ان کو ایک ٹیڈی پیسہ نہیں دیا جائے گا تاہم رجسٹریا ں رکھنے والے مالکان کی جو جائیدادیں زد میں آئیں گی انہیں ادائیگی ڈی سی او لاہور کریں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1