ایل ٹی سی سے مذاکرات ناکام،عوامی رکشہ یونین 24گھنٹوں میں احتجاج کی کال دیگی

ایل ٹی سی سے مذاکرات ناکام،عوامی رکشہ یونین 24گھنٹوں میں احتجاج کی کال دیگی

 لاہور(کامرس رپورٹر) عوامی رکشہ یونین کے لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کے ساتھ گزشتہ روز ہونے والے مذاکرات کامیاب نہ ہوسکے۔ جس کی وجہ سے عوامی رکشہ یونین24گھنٹوں میں وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہر احتجاج کی کال دے گی جس کیلئے ہنگامی طور پر مشاورتی کونسل کا اجلاس طلب کرلیا گیاہے وزیر اعلیٰ ہاؤس کے باہر دیئے جانے والے دھرنے میں شرکت کے لئے جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کو بھی ان کا وعدہ یاد دلانے کیلئے خط لکھا جائے گااور دیگر سیاسی پارٹیوں اور سول سوسائٹی کے اراکین،تاجر،وکلاء طلبہ ،مزدور تنظیموں کے نمائندوں کو بھی دھرنے میں ساتھ دینے کی اپیل کی جائے گی۔ اور عوامی رکشہ یونین کے ہزاروں کارکن بھی اپنے بیوی بچوں سمیت دھرنے میں شرکت کریں گے۔ان خیالات کو اظہار عوامی رکشہ یونین کے چیئرمین مجید غوری نے گلبرگ میں لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کے سی او حیدر لطیف سے ہونے والے مذاکرات کی ناکامی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ہم پرامن اور مزدور لوگ ہیں۔ ہمارے معاشی حالات روز روز سڑکو ں پر آنے کی اجازت نہیں دیتے۔لیکن حکومت کی مزدور کش پالسیاں ہمیں احتجاج پر مجبور کرتی ہیں۔ سارادن محنت کرکے اگر ساری کمائی چالانوں کی مد میں ہی لٹا دینی ہے اس بہتر ہے کہ ہم رکشے کھڑے کردیں۔  ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ڈی سی او نے ہمارے بہت سے مطالبات تسلیم کرلئے تھے اور ان پر عمل درآمد کیلئے آرڈر بھی جاری کردیا تھا جس کی وجہ سے ہم نے بھی ان سے بھر پور تعاون کی یقین دہانی کروائی تھی ۔ لیکن ان کے احکامات پر عمل در آمد

مزید : میٹروپولیٹن 4