امریکہ کو بھارت اورپاکستان کیساتھ برابری کی سطح پر تعلقات کو قائم رکھنا ہو گا، خواجہ عطا الرحمن

امریکہ کو بھارت اورپاکستان کیساتھ برابری کی سطح پر تعلقات کو قائم رکھنا ہو ...

 لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی شہید بھٹو پنجاب کے صدر خواجہ عطاء الرحمن نے کہا ہے کہ خطے ء میں طاقت کے توازن کو برقرار رکھنے کیلئے امریکہ کو بھارت کے ساتھ ساتھ پاکستان کے ساتھ بھی برابری کی سطح کے تعلقات کو قائم رکھنا ہو گا امریکہ کی جانب سے بھارت کی مستقل رکنیت کی حمائت سے طاقت کا توازن قائم نہیں رہے گا کیونکہ اقوام متحدہ پہلے ہی کشمیر کا مسلہء قرار دادوں کے ذریعے حل کرنے پر زور دے چکا ہے اور اگر بھارت اس کا ممبر بن جائے گا تو پھر وہ کیسے اس قرار داد پر عمل ہونے دے گا‘ آرمی چیف کے دورہ چین کے پاکستان کی سیاست اور معیشت پر بہترین اثرات مرتب ہوں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے خواجہ ہاؤس میں پیپلز پارٹی شہید بھٹو پنجاب کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔خواجہ عطاء الرحمن نے کہا کہ امریکی صدر بارک اوبامہ کا بھارت کی طرف یک طرفہ جھکاؤ اور مختصر عرصے میں دوسری مرتبہ کے دورے سے بہت سے سوال پیدا ہو گئے ہیں اس لئے ہمارا مطالبہ ہے کہ خطے ء میں طاقت کے توازن کو قائم رکھنے کے لئے امریکی صدر پاکستان کی اعلی قیادت سے بھی یہان پر آ کر ملاقاتیں کریں اور پاکستان کے تحفظات کو دور کریں۔  پاکستانیوں نے اس خطےء میں امن کے قیام کے لئے بہت سے قربانیاں دی ہیں اور ابھی تک دے رہی ہے یہاں پر یہ بھی امر قابل زکر ہے کہ حکومت کی ناقص پالیسوں کی وجہ سے امریکی صدر نے دوسری بار بھارت کا دورہ کیا ہے اس لئے حکومت کو بھی اپنی پالیسوں کو درست کرنا ہو گا اور ملک کی سیاسی جماعتوں کے ساتھ اہم امور پر مشاورت کا سلسلہ شروع کرنا ہو گا۔انہوں نے کہا کہ ہم آرمی چیف جنرل راحیل شریف کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں جو پاکستان کی تعمیرو ترقی کے لئے دن رات محنت کررہے ہیں ان کے چین کے دورہ کی وجہ سے چین کے ساتھ ہمارے تعلقات میں مزید بہتری آئے گی اور اس دورے کے پاکستان کی سیاست اور میعشت پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4