فیکٹر ی مالک کو قتل اوراغوا کی دھمکیاں دیکر بھتہ مانگنے والا ملزم گرفتار

فیکٹر ی مالک کو قتل اوراغوا کی دھمکیاں دیکر بھتہ مانگنے والا ملزم گرفتار
 فیکٹر ی مالک کو قتل اوراغوا کی دھمکیاں دیکر بھتہ مانگنے والا ملزم گرفتار

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لا ہور (کرا ئم سیل )سی آئی اے پولیس نے فیکٹری مالک کو ٹیلی فون پر قتل اور اس کے بچوں کو اغواء کرنے کی دھمکیاں دے کر ایک کروڑ روپے جگا ٹیکس /بھتہ مانگنے والے ملزم کو گرفتار کرکے اس سے دھمکیاں دینے کیلئے استعمال ہونے والا موبائل فون اور سمیں برآمد کرلیں ہیں۔تفصیلات کے مطابق 18نومبر2014کو کاسمیٹکس کا سامان تیار کرنے والی فیکٹری کے مالک شیخ کاشف آفتاب کو فون نمبر0307-4241979سے نامعلوم ملزموں کی کال آئی کہ ہم چھ ماہ سے تمہاری ریکی کر رہے ہیں،تمہارے بچے جن سکولوں میں پڑھتے ہیں اورجہاں تم آتے جاتے ہو ہمیں اس کی خبر ہے لہذااگر اپنی اور اپنے بچوں کی زند گی چاہتے ہو تو ہمیں ایک کروڑ روپے پہنچا دو۔ جس پر تھانہ نشتر کالونی میں مقدمہ نمبر1668/14بجرم384/511اور 25-Dٹیلی گراف ایکٹ درج ہوا واقعہ کا فوری نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور کیپٹن ریٹائرڈ محمد امین وینس نے ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک کو واقعہ میں ملوث ملزموں کی فوری گرفتاری کی ذمہ داری سونپی ۔ ایس پی سی آئی اے نے پولیس ٹیم کے ہمراہ شب و روزکی محنت کے بعدمدعی مقدمہ مختلف ذرائع سے حاصل ہونے والی معلوما ت کی روشنی اور کال ڈیٹا کی مدد سے واقعہ میں ملوث ملزم الیاس بلوچ کو گرفتار کرلیا۔ دوران تفتیش ملز م نے انکشاف کیا کہ وہ مدعی شیخ کاشف کی فیکٹری میں کام کرتا تھااور سات آٹھ ماہ قبل شیخ کاشف نے اسے اپنی فیکٹری سے نکال دیا تھا جس کا مجھے بہت رنج تھا فیکٹری سے نکالے جانے کے بعد میں فارغ تھا اور مجھے مدعی مقدمہ اور اس کے موبائل فون نمبر کے حوالے سے بہت معلومات تھی لہذا میں نے شیخ کاشف کوڈرا دھمکا کر پیسے وصول کرنے کا پروگرام بنایا تھا پولیس نے ملزم سے وارادت میں استعمال ہونے والا موبائل فون اور موبائل فون کی سمیں بھی برآمد کر لی ہیں جس سے مدعی کودھمکیاں آمیز کالیں کی گئی تھی۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن رانا ایاز سلیم نے پولیس ٹیم کیلئے تعریفی سرٹیفکیٹ اور نقد انعامات کا اعلان کیا ہے۔

مزید : علاقائی