انٹرنیٹ پر دوستی، ملائیشین خاتون بھارتی شہری سے شادی کرنے بھارت پہنچ گئی لیکن پھر آگے پہنچتے ہی کیا کام ہوگیا؟ جان کر کوئی لڑکی کبھی غلطی سے بھی ایسی بے وقوفی نہ کرے

انٹرنیٹ پر دوستی، ملائیشین خاتون بھارتی شہری سے شادی کرنے بھارت پہنچ گئی ...
انٹرنیٹ پر دوستی، ملائیشین خاتون بھارتی شہری سے شادی کرنے بھارت پہنچ گئی لیکن پھر آگے پہنچتے ہی کیا کام ہوگیا؟ جان کر کوئی لڑکی کبھی غلطی سے بھی ایسی بے وقوفی نہ کرے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ کچھ عرصے کے دوران پے درپے خبریں آ چکی ہیں جن کے مطابق دیگر ممالک کی خواتین انٹرنیٹ پر دوستی ہونے کے بعد پاکستان آئیں اور پاکستانی مردوں سے شادی کر لی۔ ایسے ہی ایک ملائیشین خاتون کی بھارتی شہری سے انٹرنیٹ پر دوستی ہو گئی اور وہ اس سے شادی کرنے بھارت پہنچ گئی۔ شاید اس خاتون کو بھارت کے خواتین کے ساتھ جنسی زیادتیوں کے حوالے سے دنیا میں نمبرون ہونے کا علم نہ تھا، چنانچہ بھارتی محبوب نے اسے آتے ہی جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ اب وہ ان بھارتی اداروں سے انصاف مانگتی پھرتی ہے جہاں خود بھارتی ہوس زادوں کی درندگی کا شکار ہونے والی بھارتی لڑکیوں کی شنوائی نہیں ہوتی۔

ڈھیروں نوعمر طالب علموں کے ساتھ انتہائی شرمناک کام کرنے والی مسلمان ٹیچر نے ان حرکتوں کا ذمہ دار ایک ایسی چیز کو قرار دے دیا کہ سن کر کوئی بھی مسلمان غصے سے آگ بگولیا ہوجائے

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق خاتون نے اس معاشقے کے دوران اپنے بھارتی آشنا کو ساڑھے پانچ لاکھ بھارتی روپے (تقریباً ساڑھے 8لاکھ پاکستانی روپے)بھی بھجوائے اور کئی قیمتی تحائف بھی دیئے۔ نوجوان نے اس سے بھارتی شہریت دلوانے کے بہانے بھی اچھی خاصی رقم بٹوری اور شادی کا جھانسہ دے کر کئی ماہ تک جسمانی تعلق بھی قائم کیے رکھا۔ اتنا عرصہ گزرنے کے باوجود شادی سے ٹال مٹول کرنے پر خاتون برہم ہو گئی جس پر نوجوان نے شادی سے یکسر انکار کر دیا اور غائب ہو گیا۔ اس پر خاتون پولیس کے پاس چلی گئی اوراس کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا۔ رپورٹ کے میں خاتون اور بھارتی نوجوان کے نام ظاہر نہیں کیے گئے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -