آئی ٹی یومیں لنکن کارنر کا قیام

آئی ٹی یومیں لنکن کارنر کا قیام
آئی ٹی یومیں لنکن کارنر کا قیام

  

وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے ارفع کریم سافٹ ویئر ٹیکنالوجی پارک لاہورمیں امریکہ کے قونصلیٹ جنرل اور انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی حکومت پنجاب کے اشتراک سے بننے والے پہلے لنکن کارنرکا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی میں لنکن کارنر کا قیام انتہائی خوش آئند اقدام ہے، جس سے طلبہ و طالبات کو امریکی طلبہ کی سرگرمیاں اور انگریزی زبان سیکھنے کے مواقع میسر ہوں گے۔ لنکن کارنرسے پاکستانی اور امریکی طلبہ و طالبات میں رابطے بڑھیں گے اور ایک دوسرے کے کلچر کو سمجھنے میں مدد ملے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ لنکن کارنر میں انٹرنیٹ، کتابوں ، میگزین اور ویڈیوز کی مفت سہولت فراہم کی گئی ہے، جس سے نوجوان فائدہ اٹھائیں گے اور مختلف معلومات تک ان کی رسائی آسان ہو گی اوربلا شبہ لنکن کارنر میں مہیا کی جانے والی جدید سہولتوں کی بدولت نوجوان اپنے آپ کو مزید بااختیار بنائیں گے، کیونکہ لنکن کارنر میں متعدد سہولتیں دی گئی ہیں۔پاکستان کے مختلف شہروں میں ایسے 19 سنٹر قائم کئے گئے ہیں، جن سے پاکستانی طلبہ کو لیپ ٹاپ کے ذریعے جدید ٹیکنالوجی سے آگاہی مل رہی ہے۔

شہباز شریف نے ایک اجلاس میں سکولوں میں سمارٹ بورڈز(ایل سی ڈیز)کے ذریعے طلبہ و طالبات کو تعلیم دینے اور اساتذہ کی تربیت کے حوالے سے مختلف امور کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کا زیادہ سے زیادہ استعمال شعبہ تعلیم میں انقلاب آفرین نتائج دے گا،یہی وجہ ہے کہ پنجاب حکومت نے جنوبی پنجاب اور صوبے کے دوردراز اضلاع میں قائم دانش سکولوں میں سمارٹ بورڈز کے ذریعے بچوں اوربچیوں کوتعلیم دینے کا سلسلہ 2011ء سے شروع کررکھا ہے۔حکومت پنجاب کی جانب سے 2012ء میں انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی لاہور کا قیام عمل میں لایا گیا۔اس ادا رے میں جدید ٹیکنالوجی سے متعلق علوم متعارف کروائے گئے ہیں۔ آئی ٹی یو میں طلبہ کی صلاحیتوں کے لئے علمی،تحقیقی اور تخلیقی فضا قائم کی گئی ہے اس ادارے کا اولین مقصد سائنس ،ٹیکنالوجی اور انجینئرنگ کے میدان میں جدت کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ آئی ٹی انڈسٹری میں قابل،محنتی اور ہونہارافرادی قوت کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔

ایم آئی ٹی ٹیکنالوجی ریویو ،بین الاقوامی طور پر سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے کا سب سے معتبر میگزین ماناجاتا ہے،جس کی ابتداء 1899ء میں ہوئی، جو اس وقت دنیا کے 147ممالک میں اورچھ زبانوں میں شائع ہوتا ہے۔پاکستان ایڈیشن کی اشاعت کے بعد پاکستان بھی ان ممالک کی صف میں شامل ہو گیا ہے۔ایم آئی ٹی ٹیکنالوجی ریویو انگریزی اور اردو زبانوں میں شائع کیا گیا ہے،تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس سے استفادہ کر سکیں۔پاکستان میں شائع ہونے والے اس میگزین کے ذریعے پاکستان میں ہونے والی جدید تحقیقات کو بین الاقوامی سطح تک پھیلایا جاسکے گا۔انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی لاہورکو پاکستان میں ایم آئی ٹی ٹیکنالوجی ریویو کی اشاعت اور ترجمے کے مکمل حقوق حاصل ہیں، جس میں ہم دنیا بھر میں سائنس اور ٹیکنالوجی کے میدان میں ہونے والی ایجادات اورجدید رجحانات سے آگاہی فراہم کر سکیں گے۔ اس کے ساتھ ساتھ پاکستانی سائنسدانوں ، ریسرچرز، اور انٹر پرینیور کو ایسا پلیٹ فارم مہیا ہوگا، جہاں وہ اپنے کام کو دنیا بھر میں اجاگر کرسکیں۔

مزید :

کالم -