محکمہ جنگلی حیات کے تین ملازمین اور گلگت بلتستان کے چار رضاکاروں نے تاریخ رقم کر دی،اپنی جان پر کھیل کر ایسے نایاب جانور کی زندگی بچا لی کہ جان کر آپ بھی عش عش کر اٹھیں گے

محکمہ جنگلی حیات کے تین ملازمین اور گلگت بلتستان کے چار رضاکاروں نے تاریخ ...
محکمہ جنگلی حیات کے تین ملازمین اور گلگت بلتستان کے چار رضاکاروں نے تاریخ رقم کر دی،اپنی جان پر کھیل کر ایسے نایاب جانور کی زندگی بچا لی کہ جان کر آپ بھی عش عش کر اٹھیں گے

  

گلگت بلتستان(ڈیلی پاکستان آن لائن )گلگت بلتستان کے رضاکار اور محکمہ جنگلی حیات کے تین ملازمین نے تاریخ رقم کر دی ،اپنی جان داﺅ پر لگا کر انتہائی نایاب برفانی چیتے کی زندگی بچا لی ہے۔

تفصیلات کے مطابق انتہائی نایاب برفانی چیتے کا بچہ جو کہ دو سال قبل پاک چین بارڈر کے پاس ملاتھا اسے نلتر کے علاقے میں چھوڑا گیا تھا اور اس کی حفاظت کیلئے تین محکمہ جنگلی حیات کے ملازمین کو تعینات کیا گیا تھا جبکہ اس کی بحالی کیلئے بشکری میں بحالی سینٹر بنایا گیاتھا۔

مزیدپڑھیں:شادی کے سیزن میں اس چیز سے بال دھونے سے ان میں ایسی چمک آئے گی کہ سب آپ کی تعریف کرنے پر مجبور ہوجائیں گے

نلتر سے بشکری کا سفر صرف 9کلومیٹر ہے جو کہ عام حالات میں چندھ ہی منٹوں میں طے کر لیا جاتاہے لیکن شدید برفباری کے باعث راستے بند تھے اور نایاب چیتے کے بچے کو بحفاظت بشکری میں بحالی سینٹر پہنچانا تھا ۔تینوں ملازمین شدید برفباری کے باعث نلتر میں پھنس گئے تو گلگت بلتستان کے چار رضاکاروں کو انہیں لانے کیلئے بھیجا گیا ۔محکمہ جنگلی حیات کے تینوں ملازمین سمیت ساتوں افراد چیتے کو بحالی سینٹر پہنچانے کیلئے شدید برفباری والے علاقے میں 24گھنٹے تک چیتے کو پالکی کی طرح اٹھا کر چلتے رہے جس کے باعث ان کے پاﺅں شدید زخمی ہو گئے ہیں لیکن انہوں نے نایاب چیتے کو بحفاظت بحالی سینٹر پہنچا دیاہے۔ساتوں افراد کو گلگت بلتستان کے ڈی ایچ کیو ہسپتال میں اعلاج کیلئے منتقل کر دیا گیاہے۔محکمہ جنگلی حیات کے تینوں ملازمین کی تنخواہیں انتہائی کم ہیں لیکن انہوں نے اپنی جان پر کھیل کر چیتے کی جان بچالی ہے ۔

مزیدپڑھیں:TapMad نے ہمہ وقت سرگرم رہنے والوں کے لئے انٹرٹینمنٹ کی نئی دنیا متعارف کروادی

مزید :

ڈیلی بائیٹس -