میاں چنوں میں گیس بندش کیخلاف خواتین کا توے، چمچے اٹھا کر احتجاجی مظاہرہ

میاں چنوں میں گیس بندش کیخلاف خواتین کا توے، چمچے اٹھا کر احتجاجی مظاہرہ

  

میاں چنوں، خانیوال، فتح پور(نمائندگان) سوئی گیس اور بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈں گ کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا میاں چنوں میں خواتین نے گیس کی بندش کیخلاف ہاتھوں میں توے اور چمچے اٹھا کرشدید احتجاج کرتے ہوئے جی ٹی روڈ کو ٹائر جلا کر بلاک کردیا میاں چنوں سے نمائندہ خصوصی پاکستان کیمطابق میاں چنوں شہر اور نواحی علاقوں میں گیس کی بندش کے خلاف خواتین نے احتجاج کرتے ہوئے جی ٹی روڈ ٹی چوک کو ٹائر جلا کر ٹریفک کے لئے بند کر دیا اور حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی اس موقعہ پر خواتین نے ہاتھوں توے ،چمچے اٹھا رکھے تھے ،اور ان کا مطالبہ تھا کہ ہمارے گھروں کو گیس فراہم نہ کی گئی تو آئندہ احتجاج اس سے بھی زیادہ ہوگا اور تب تک ہم جی ٹی روڈ پر دھرنا دیں گے جب ہم ہمارے مطالبات پورے نہ کئے جائیں گے،ایس ایچ او تھانہ سٹی کی یقین دھانی پر احتجاج ختم کہ ایک گھنٹے تک ان کے گھروں گیس فراہم کر دی جائے گی،خانیوال سے نمائندہ پاکستان کیمطابق خانیوال شہر اور نواحی علاقوں میں بجلی کی طویل بندش نے شہریوں کو اذیت میں مبتلا کردیا ہے گزشتہ روز خصوصاً جمعۃ المبارک کی تیاری مشکل رہی اس سلسلے میں جب میپکو آفس رابطہ کیا جاتاہے تو کوئی تسلی بخش جواب نہیں دیا جاتا اور کسٹمر سینٹر کا ٹیلی فون تو اٹینڈ ہی نہیں ہوتا سماجی شہری شخصیات محمدعبداللہ، ملک اقبال ،شیخ ناصر ،محمداحمد، اور دیگر نے میپکو چیف سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ فتح پور سے سٹی رپورٹر کیمطابق فتح پور اور گردونواح میں واپڈا حکام نے بجلی کی بندش کا سلسلہ وسیع کر دیا ، کئی کئی گھنٹے کی غیر اعلانیہ بندش کی وجہ سے کاروباری زندگی معطل ہو کر رہی گئی ہے ، اور دیہی علاقوں میں روزانہ مسلسل چھ چھ گھنٹے بجلی بند کی جارہی ہے ، جس کی وجہ سے دیہی علاقوں کے لوگوں کو بھی شدید پریشانی کا سامنا ہے ، مقامی لوگوں نے بجلی کی غیر اعلا نیہ لوڈشیڈنگ پر شدید احتجاج کیا اور بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کا مطا لبہ کیا ہے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -