کروڑوں کے ناجائز اثاثے بنانے پر پی ڈبلیو ڈٰ کے ایگزیکٹیو انجینئر ظہیر وڑائچ گرفتار

کروڑوں کے ناجائز اثاثے بنانے پر پی ڈبلیو ڈٰ کے ایگزیکٹیو انجینئر ظہیر وڑائچ ...

  

لاہور( خبرنگار) نیب پنجاب نے کارروائی کرتے ہوئے کرپشن اوربدعنوانی میں ملوث پاک پی ڈبلیو ڈی کے ایگزیکٹیو انجینئر ظہیر وڑائچ کو گرفتار کر لیا ہے ، ملزم کے گھر سے چار لگژری گاڑیاں بھی برآمد، ملزم پر آمدن سے زائد کروڑوں کے اثاثے بنانے کا الزام ہے۔ ایگزیکٹو انجینئر ظہیر وڑائچ کے خلاف 8کروڑ سے زائد مالیت کے اثاثے جمع کرنے کا الزام ہے۔ ملزم نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے نہ صرف قومی خزانے کو نقصان پہنچایا بلکہ ذاتی اثاثوں میں بے دریغ اضافہ بھی کیا ۔ڈی جی نیب پنجاب میجر (ر) سیدبرہان علی کے مطابق ملزم ظہیر وڑائچ 13 اگست 1991 میں محکمہ ہذا میں اسسٹنٹ ایگزیکٹیو انجینئر کی حیثیت سے تعینات ہو ا اور اپنی ملازمت کے دوران ملزم نے محدود آمدن کے باوجود وسیع جائیداد جس میں لاہور کے پوش علاقوں میں 2،2کنال کے 3 عالیشان بنگلے ، ایک کنال کا پلاٹ بنایا ۔ اس کے علاوہ ملزم ظہیر وڑائچ نے ضلع فیصل آباد اور ٹوبہ ٹیک سنگھ میں 32کنال پر محیط پولٹری فارم کے حصص بھی حاصل کئے ۔ علاوہ ازیں ٹوبہ ٹیک سنگھ میں 160کنال زرعی زمین اور ضلع فیصل آباد میں 20کنال کی زرعی زمین بھی حاصل کر رکھی ہے۔ مزید برآں ملزم نے اپنے خاندان کے مختلف لوگوں کے نام پر کئی بنکوں میں اکاؤنٹس کھول رکھے ہیں۔نیب پنجاب نے ملزم کے گھر چھاپہ مار کر چار لگژری گاڑیاں بھی برآمد کر لی ہیں۔ ملزم ظہیر وڑائچ کو گرفتاری کے بعد احتساب عدالت سے 15 روزہ جسمانی ریمانڈ بھی حاصل کر لیا جس میں مزید انکشافات کی توقع ہے۔

کرپشن،گرفتار

مزید :

صفحہ آخر -