ہزارہ ڈویژن ، ٹریفک کیمسائل کے حل کیلئے منصوبوں پر جلد کام شروع ہو گا : مشتاق احمدغنی

ہزارہ ڈویژن ، ٹریفک کیمسائل کے حل کیلئے منصوبوں پر جلد کام شروع ہو گا : مشتاق ...

  

 پشاور( سٹاف رپورٹر ) ہزارہ ڈویژن کی ٹریفک کی بھیڑ کے مسئلہ کے حل کیلئے ایک اعلی سطح اجلاس خیبر پختونخوا کے پلاننگ اینڈ ڈیویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ پشاورمیں منعقد ہوا جس میں وفاقی حکومت کی طرف سے ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی، وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے اطلاعات و اعلی تعلیم مشتاق احمد غنی ،مشیر برائے سی اینڈ ڈبلیو اکبر ایوب ، ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد اور NHAکے اعلی حکام نے شرکت کی،اجلاس میں ہزارہ ڈویژن کے ٹریفک کے مسئلے کو حل کیلئے تجاویز پر غور کے گیا اور مشترکہ طور پر اقدامات اٹھانے کیلئے لائحہ عمل بھی طے کیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق ایبٹ آباد میں کھوتاقبر سے لے کر بس سٹینڈ تک روڈ کی توسیع اور بحالی کیلئے تجاویز پر غور کیا گیا جبکہ دوسر ے منصوبے کے تحت چار لینوں پر مشتمل بلند سڑک بس سٹینڈ سے لے کر اﷲ ہو چوک تک تعمیر کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔اﷲ ہو چوک سے لے کر شاہینہ جمیل ہسپتال تک 8.7کلومیٹر روڈ کی توسیع اور بحالی کیلئے بھی لائحہ عمل طے پایا گیا۔ ایم این اے نے بریفنگ کے دوران واضح کیا کہ ان منصوبوں کی تکمیل سے ہزارہ ڈویژن اور ایبٹ آباد سٹی کے تمام ٹریفک مسائل حل ہو سکیں گے جس سے عوام کی مشکلات کا ازالہ ممکن ہو سکے گا۔صوبائی اور وفاقی حکومت کے نمائندوں نے ہر قسم کی مدد کا یقین دلاتے ہوئے واضح کیا کہ ان منصوبوں کے تکمیل کو جلد از جلد یقینی بنایا جائے اور اس سلسلے میں اگلے ہفتہ صوبے اور وفاق میں تعاون اور اشتراک کے حوالے سے وزیر اعلی خیبر پختونخوا پرویز خٹک کو بھی بریفنگ دی جائے گی۔اس موقع پر مشتاق احمد غنی نے واضح کیا کہ موجودہ حکومت عوام کے بنیادی مسائل کے حل اور بنیادی حقوق کی فراہمی پر یقین رکھتی ہے ۔مزید برآں انہوں نے واضح کیا کہ ہزارہ ڈویژن میں ٹریفک کے مسائل کو حل کرنے کیلئے موجودہ حکومت تمام وسائل بروئے کار لائے گی اور اگلے ہفتہ وزیر اعلی سے اجلاس کے بعد جلد کام کا آغاز کیا جائے گا۔ان منصوبوں پر مجموعی طور پر 11.75ارب روپے کی لاگت آئے گی۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -