18ویں ترمیم آئین کا روشن باب اور بڑا اقدام ہے :سینیٹرتاج حیدر

18ویں ترمیم آئین کا روشن باب اور بڑا اقدام ہے :سینیٹرتاج حیدر

  

پشاور( سٹاف رپورٹر ) اٹھارویں ترمیم آئین کا روشن باب اور بڑا اقدام ہے۔ جو سیاسی قیادت کی کاوشوں کی بدولت ممکن ہوسکا، ان خیالات کا اظہار سینٹ کی فنکشنل کمیٹی برائے ڈیویلوشن کے چیئرمین میر کبیراحمد محمد شاہی نے صوبائی سیکرٹریٹ پشاور میں کمیٹی اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر سنیٹر تاج حیدر، سینٹر سسی پلیجو، سنیٹر ستارہ آیاز اور سنیٹر محمد علی خان سیف بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے تحت 2010سے 2017تک17 وزارتیں صوبوں کو تفویض کرنا تھیں۔ لیکن اب تک ایک بھی وزارت عملی طور پرتفویض نہیں ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ اب محکموں کو نئے نام دے کر 12نئی وزارتیں بنائی گئیں۔ یہاں کمیٹی اجلاس منعقد کرنے کا مقصد اٹھارویں ترمیم کے بعد اختیارات کووفاق سے صوبوں کو منتقل کرنے کے عمل کا جائزہ لینا تھا۔ اس سے قبل کمیٹی نے بلوچستان اورسندھ میں اجلاس منعقد کیے اور اس کے بعد عنقریب پنجاب میں کمیٹی کا اجلاس ہوگا ۔سنیٹر تاج حیدر نے کہا کہ اگر صوبوں کو اٹھارویں ترمیم کے ثمرات سے فائدہ اٹھانا ہے تو صوبوں کو اس بارے قانون سازی کرنا ہوگی۔ اس موقع پر سنیٹر ستارہ آیاز اور سسی پلیجو نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -