ناقص پالیسیوں کی بدولت صوبہ دیوالیہ ہوچکا ،محمد ایوب

ناقص پالیسیوں کی بدولت صوبہ دیوالیہ ہوچکا ،محمد ایوب

  

مٹہ ( نما ئندہ پاکستان) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی نائب صدر اور سابق صوبائی وزیر محمد ایوب خان اور مٹہ تحصیل کے صدر قاسیم خان نے کہا ہے ۔کہ موجودہ حکومت کے غلط پالیسیوں کی وجہ سے اس وقت صوبہ دیوالیہ ہوچکا ہے ۔اور میں تمام ترقیاتی کام مکمل طور پر روک گیا ہے ۔اور اس وقت صوبائی حکومت صوبہ قرضوں پر چلانے پر مجبور ہے ۔پارٹی کے کارکنان اور خاص کر یونین کونسلوں کے عہدیدار پارٹی کا پیغام کھر تک پہنچائیں ۔ودودیہ ہال میں ہونے والی برسی میں مٹہ تحصیل کے ہزاروں لوگ شریک ہونگے ۔اپر سوات کو ضلع بنانے کیلئے 22ارب روپے کم ازکم درکار ہے ۔جو موجودہ صوبائی حکومت کی بس کی بات نہیں ۔اس اہم بات کو اگر الیکشن کیلئے ایشو بنایا گیا ۔تو ذمہ داری موجودہ حکومت پر ہوگی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز مٹہ میں پارٹی کے مٹہ تحصیل کے عہدیداروں اور یونین کونسلوں کے عہدیداروں کے ایک اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اجلاس پارٹی کے دیگر قائدین اور عہدیداروں نے بھی خطاب کی ۔اور مختلف تجاویز پیش کردی ۔انہوں نے کہا ۔کہ موجودہ حکومت عوام کی خدمت میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے ۔اور اس وقت صوبہ مکمل طورپر دیوالیہ ہوکر قرضوں پر حکومت ہورہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ائندہ دور اے این پی کا ہے ۔اور اے این پی صوبے میں ایک مضبوط حکومت بنائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ اپر سوات کو ضلع کا درجہ دینے سے پہلے یہاں پر عوام کیلئے ضلعی ہسپتال ۔ضلعی تعلیمی ادارے اور دیگر سہولیات کی بندوبست ہونا چایئے ۔اور اگر یہ اہم ایشو بھی موجودہ حکومت دیگر کاموں کی طرح بورڈ لگانے اور الیکشن کیلئے ایک پوائینٹ سکور کرنا چاہتے ہے ۔تو یہ سراسر زیادتی ہوگی ۔جس کی تمام تر ذمہ داری موجودہ حکومت پر ہوگی ۔اس موقع پر برسی میں شرکت کی حوالے سے بھی بات چیت کی گئی ۔جبکہ اس موقع پر خان طوطی تحصیل کے جائینٹ سیکرٹری مقرر کردیا گیا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -