ملک کی سلامتی و بقاء کی خاطر پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں

ملک کی سلامتی و بقاء کی خاطر پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں

  

 پاراچنار (نمائندہ پاکستان) پاراچنار میں نماز جمعہ کے خطبے سے خطاب کرتے ہوئے علامہ فدا حسین مظاہری نے بم دھماکے پرافسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے سلامتی کے خاطر ہم پاک فوج کے ساتھ ہیں اور ساتھ رہینگے۔پاراچنار میں آٹھ دھماکے ہوچکے ہیں۔سینکڑوں شہید اور زخمی ہو چکے ہیں۔ موجودہ نواز حکومت کے دور میں کرم ایجنسی کے طوری بنگش قبائل پر خود کش حملوں میں درجنوں افراد شہید ہو چکے ہیں۔چار تنظیموں نے حملے کے ذمہ داری قبول کئے ہیں ۔یہ ملک اور پورے قوم کے دشمن ہونے کے باجودحکومت نے پنجاب میں ممبر اسمبلی بنواتے ہیں۔پاراچنار کے خالیہ دھماکے کے ایک طرف لشکر جھنگوی ذمہ داری قبول کرتے دوسر طرف وزارت حارجہ کے ترجمان بھارتی خفیہ ایجنسی(را) کے ملوث ہونے کا شبہ قرار دیتا ہے۔کرم ایجنسی میں اہل تشیع کو اسلئے نشانہ بنا رہا ہے کہ کرم ایجنسی میں 2007سے ابتک طورری بنگش کے غیرت مند اور محب وطن پاکستانیوں کو نشانہ بنانے کا اصل وجہ پاک آرمی کے ساتھ ایک ہوکر دہشت گردوں کا صفایا کر نے میں ساتھ دیا اور دوہزار سے زائد جوانوں کے قربانیاں پیش کئے ہیں۔ ہمارے چاروں اطراف طالبان اور داغش کے دہشتگردوں کے مراکز موجود ہیں ان کے آج تک اپنے خون کے قربانی دیکر بچایا ہیں مگراب بقاعدہ ایک سازش کے ذریعے اپنے دفاع کے حق سے محروم کرکے طوری بنگش قبائل خالی ہاتھ پاراچنار میں بم حملوں کرنے والے دہشت گردوں کے سپرد کرنے کی سازش تیار کیا جار ہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت ان ملک دشمن دہشت گردوں کو پکڑ اور تحت دار پر پھانسی کے بجائے انکو کھول عام چھوڑدئیے گئے ہیں ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -