ڈگر تاجوخیلہ روڈ پر تجاوزات کے خلاف آپریشن پر عوامی ردعمل کا سلسلہ جاری

ڈگر تاجوخیلہ روڈ پر تجاوزات کے خلاف آپریشن پر عوامی ردعمل کا سلسلہ جاری

  

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر )بونیر کی ضلعی انتظامیہ اور ہائی وے کی جانب سے ڈگر تاجوخیلہ روڈ پر تجاوزات کے خلاف اپریشن پر عوامی ردعمل کا سلسلہ جاری ہے ۔جماعت اسلامی سلطان وس کے مقامی رہنماء الطاف خان نے اپنے ایک اخباری بیان دیتے ہو ئے کہاہے کہ بونیر میں غریب کے لئے الگ اور امیر کے لئے الگ قانون ہے ،تجاوزات کی آڑ میں غریب عوام کا شدید نقصان کیا گیا جبکہ بااثر افراد پر ہاتھ ڈالنے سے گریز کیا گیاہے ۔ڈپٹی کمشنر بونیر ،ضلع ناظم اور ضلع نائب ناظم تحقیقات کرکے غریبوں کے ساتھ ہو نے والی زیادتی کا ازالہ کرے ۔انہوں نے کہا کہ سلطان وس میں میرے گھر کے سامنے نالی پر پڑی ہو ئی کنٹریکٹ کو ایکسیویٹر کے ذریعے ہٹایا گیاہے جبکہ میرے گھر کے قریب بااثر گھروں کو چھوڑ دیاگیاہے ۔اگر قانون سب کے لئے برابر ہے تو جس نے بھی اپنی حد سے تجاوز کیاہے اس کو ہٹانا چاہئے ،اے اے سی ڈگر اور ایس ڈی او ہا ئی نے ذاتی پسند نا پسند کی بنیاد پر کاروائی کی ہے ۔انہوں نے ڈی سی بونیر سمیت وزیر اعلی خیبر پحتون خواہ اور اعلی حکام سے مطالبہ کیاہے کہ ایک انکوائیر ٹیم مقرر کی جائے اور کئے گئے اپریشن کی رپورٹ قوم کے سامنے پیش کی جائے ،انہوں نے کہا کہ پاچا بازار انتہائی تنگ ہے ۔بونیر کی ضلعی انتظامیہ بااثر افرادکے دکانوں اور مارکیٹس پر ہاتھ ڈالنے اور روڈ کو کھولنے کی زحمت نہیں کرتے مگر غریب عوام کو تجاوزات کے نام پر تنگ کیا جارہاہے اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو عوام بھی تنگ اکر جانبدار انتظامیہ کے خلاف سڑکوں پر نکل ائیں گے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -