جوڈیشل مارشل لا کا بیان: ہائی کورٹ نے جاوید ہاشمی کیخلاف درخواست مسترد کردی

جوڈیشل مارشل لا کا بیان: ہائی کورٹ نے جاوید ہاشمی کیخلاف درخواست مسترد کردی
جوڈیشل مارشل لا کا بیان: ہائی کورٹ نے جاوید ہاشمی کیخلاف درخواست مسترد کردی

  

لاہور(ویب ڈیسک) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے سابق وفاقی وزیر اور سینئر سیاست دان جاوید ہاشمی کے جوڈیشل مارشل لاءکے حوالے سے بیان دینے پر ان کے خلاف دائر درخواست نا قابل سماعت قرار دیکر مسترد کردی۔

چاروں لاپتہ ہونے والے بلاگرزپراسرار طور پر گھروں کو پہنچ گئے

درخواست گزار کامران خان کی جانب سے دائر درخواست میں اس کے وکیل سلیم ایڈووکیٹ نے نشاندہی کی کہ سیاست دان جاوید ہاشمی نے بیان دیا کہ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان ملک میں جوڈیشل مارشل لاءلگوانا چاہتے ہیں۔ وکیل کے مطابق عمران خان کے بارے میں جاویدہاشمی کا بیان ازخود توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے۔وکیل نے موقف اختیار کیا کہ جاوید ہاشمی جوڈیشل مارشل لاءکے بارے میں بیان دے کر توہین عدالت کے مرتکب ہوئے ہیں تاہم ہائیکورٹ نے درخواست پر ابتدائی سماعت کے بعد اس کو نا قابل پیش رفت قرار دیتے ہوئے مستردکردیا۔

مزید :

لاہور -