پاناما کیس میں ججز اور نواز شریف بہت سوفٹ جا رہے ، وزیر اعظم نے اسے مذاق بناکر رکھا، عدالت کیس کافیصلہ سناسکتی ہے :اعتزاز احسن

پاناما کیس میں ججز اور نواز شریف بہت سوفٹ جا رہے ، وزیر اعظم نے اسے مذاق بناکر ...
پاناما کیس میں ججز اور نواز شریف بہت سوفٹ جا رہے ، وزیر اعظم نے اسے مذاق بناکر رکھا، عدالت کیس کافیصلہ سناسکتی ہے :اعتزاز احسن

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) رہنماءپاکستان پیپلز پارٹی اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ پاناما کیس میں سپریم کورٹ کے ججز اوروزیر اعظم نواز شریف بہت سوفٹ جا رہے ہیں۔عدالت کے پاس اس وقت جتنے ثبوت آچکے ہیں ہیں وہ اپنا فیصلہ سنا سکتی ہے۔

پارلیمنٹ اور جمہوریت کو میں نے بچایا،پیپلزپارٹی غلط کریڈٹ لے رہی ہے:جاوید ہاشمی

نجی ٹی وی سماءنیوز کے پروگرام "ایجنڈا"360میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے پاناما کیس کو مذاق بنا کر رکھ دیا ہے،وہ عوام کی عدالت میں اس کیس کو ہار چکے ہیں۔مک مکا والی سیاست کا وقت گزر چکا جس سے ملک کو بہت نقصان بھی پہنچا ،نواز شریف اس کیس میں پھنس چکے ہیں۔شریف خاندان نے تسلیم کرلیا ہے کہ لندن کے فلیٹس ان کے اپنے ہیں ،یہ بات الگ ہے کہ وہ مریم نواز کے ہیں یا حسین نواز کے،مریم نواز اس کیس میں صرف ڈسٹریکشن ہے۔ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے پاس پاناما کیس کے حوالے سے کافی مواد آچکا ہے،اس وقت عدالت فیصلہ کر سکتی ہے،اسے کوئی دقت یا تنگی نہیں اپنافیصلہ سنانے میں۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ اگر عدالت نے قطری خط جیسے ثبوتوں کوماننا شروع کردیا تو عوام اور ہم سب منی لانڈرنگ کرنے میں آزاد ہوں گے۔احتساب ایکٹ 1997میں نواز شریف نے خود بنایا تھااور اب ان کی اپنی اربوں روپے کی چوری پکڑی گئی ۔انہوں نے اپنی بیرون ملک جائیدادیں قبول کرلی ہیں اوران کے قانونی ثبوت بھی جمع نہیں کروا سکے۔اعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ اگر نواز شریف کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا تو اس سے جمہوریت کو کوئی بھی نقصان نہیں ہوگا۔اسمبلیاں ویسے ہی چلتی رہیں گی اور نواز شریف کوئی نیا وزیر اعظم بنا دیں گے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب میں ایک اور ریلی نکالے گی۔

مزید :

اسلام آباد -