شیخوپورہ : سکول میں داخلہ نہ ملنے پر سپیشل طلباء کا حکومت کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

شیخوپورہ : سکول میں داخلہ نہ ملنے پر سپیشل طلباء کا حکومت کیخلاف احتجاجی ...

 شیخوپورہ(بیورورپورٹ)سپیشل ایجوکیشن سکول میں داخلہ نہ ملنے پر گونگے بہرئے طلباء کا پنجاب حکومت کے خلاف شدید احتجاجی مظاہرہ ، مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھاکر سکول کے بعد ڈپٹی کمشنرآفس کے باہر احتجاج ریکارڈ کروایا،اسسٹنٹ کمشنر شبیر حسین بٹ نے معصوم اوربے زبان طلباء کے احتجاج کو توجہ نہ دی تو وکلاء رہنما ملک طارق عزیز ایڈووکیٹ بھی انتظامیہ پر پھٹ پڑئے،تفصیلا ت کے مطابق گورنمنٹ ڈیف اینڈ ڈیفکٹیو ہیرنگ ہائی سکول سول لائن کے دودرجن سے زائد طلباوطالبات کو سکول کے پرنسپل اورٹھیکیدار کے جھگڑئے نے سڑکوں پر فٹ بال بنا کررکھ دیا،ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج اشترعباس کو تحریری درخواست دینے والے طالبعلموں عمیر سعید، محمدفرحان، ارسلان احمد، لقمان حبیب نول،علی حسن ،محمد بلال جٹ،جنید مان،امجد علی ،عرفان محموداور عظیم عباس وغیرہ دودرجن کے قریب طلباء نے بتی چوک میں ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھاکر پیدل سول لائن ہائی سکول پہنچ کر شدید احتجاجی مظاہرہ کرنے کے بعد ڈپٹی کمشنر آفس کے باہر احتجاجی دھرنا دیا گونگے بہرئے طالبعلموں کے احتجاج میں درجنوں وکلاء بھی شامل ہوگئے جنہوں نے بچوں کے ہاتھوں میں اٹھائے ہوئے پلے کارڈزپر تحریر کئے گئے مطالبات کو پڑھ کر اسٹنٹ کمشنر شیخوپورہ شبیر حسین بٹ سے بچوں کے سکول پرنسپل اور ٹھیکیدار میں ہونے والی لڑائی کی وجہ سے طالبعلموں کے داخل نہ کرنے کی بات کی تواسٹنٹ کمشنر شیخوپورہ شبیر حسین بٹ نے میڈیا اوروکلاء کے سامنے کوئی واضح موقف نہ رکھا تو شیخوپورہ بار کے سنیئر ایڈووکیٹ ملک طارق عزیز برہم ہوگئے اور خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زبان والوں تم بے زبانوں کے احتجاج کو ڈرامہ کہہ رہے ہوجاگویہ قوم کا مستقبل ہیں متعلقہ حکا م ان معصوم اور بے زبان بچوں کے داخلے اوردرپیش مسائلات کا تدارک کریں۔

مزید : علاقائی