15سالہ لڑکی تشدد کے بعد قتل، ذہنی معذور سردی سے جاں بحق، حادثات میں 3ہلاک

15سالہ لڑکی تشدد کے بعد قتل، ذہنی معذور سردی سے جاں بحق، حادثات میں 3ہلاک

ملتان، عبد الحکیم، بورے والا، چوک سرور شہید، اوچ شریف(وقائع نگار، نمائندگان) نا معلوم نشئی کی لاش برآمد، 15سالہ لڑکی تشدد کے بعد قتل کردی گئی، زیادتی کا بھی شبہ ہے پولیس، حادثات میں چار افراد جان کی بازی ہار گئے۔ملتان سے وقائع نگار کے مطابق تھانہ سیتل ماڑی کے علاقہ جنرل بس اسٹینڈ سے نامعلوم شخص کی لاش برآمد ہوئی ہے۔۔ پولیس کے مطابق برآمد ہونے والی لاش 22سالہ(بقیہ نمبر19صفحہ12پر )

نوجوان کی ہے،اوربظاہر نوجوان نشہ کا عادی معلوم ہوتا ہے۔عبد الحکیم سے نمائندہ پاکستان، سٹی رپورٹر ، نامہ نگار کے مطابق نواحی موضع باٹیاں کا رہائشی چودھری عبدالغفار آرائیں موٹر سائیکل پر سوار ہوکر سدھنائی کینال ریلوے پل کراس کر رہا تھا کہ اسی اثناء میں عقب سے آنیوالی ریل گاڑی 42ڈاؤن قراقرم ایکسپریس نے کچل دیا جس کے نتیجے میں مذکور موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا جبکہ موٹرسائیکل کے پرخچے اڑ گئے۔ حادثہ جمعہ کی شب 9بجے کے بعد شدت دھند کے سبب پیش آیا۔مقامی پولیس نے واقعہ اتفاقیہ قراردیکر کاروائی نمٹا دی ہے۔بورے والا سے تحصیل رپورٹر کے مطابق بورے والا کے معروف میڈیسن سپیشلسٹ ڈاکٹر عمران اسلم’’گذشتہ شب اپنے والد(ر)ہیڈ ماسٹر گورنمنٹ بی ٹی ایم ہائی سکول چوہدری محمد اسلم اور ڈرائیور کے ہمراہ لاہور سے واپس اپنی کار پر آ رہے تھے کہ شیخ فاضل کے قریب شدید دھند کی وجہ سے ڈرائیور کار پر قابو نہ رکھ سکا اور کار بے قابو ہو کر قلا بازیاں کھاتی ہوئی قریبی کھیتوں میں جاگری جس سے(ر)ہیڈ ماسٹر چوہدری محمد اسلم سر میں شدید چوٹ آنے سے موقع پر ہی دم توڑ گئے جبکہ حادثے میں ڈاکٹر عمران اسلم اور اُنکے ڈرائیور بھی زخمی ہو گئے دوسرے واقعہ میں کالج روڈ پر واقع خالق سلنکی آپٹیکل کے مالک جہانگیر کا جوان بیٹا بلال احمد گذشتہ شام اپنی موٹرسائیکل پر نہر بنگلہ روڈ پر اپنے گھر جا رہا تھا کہ اچانک موٹرسائیکل بے قابو ہو کر سڑک کنارے لگے ایک سائن بورڈ سے ٹکرا گیا بلال احمد کا سر آہنی بورڈ سے بُری طرح ٹکرایا اور وہ شدید زخمی ہو گیا جسے فوری طور پر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بورے والا لایا گیا مگر وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ چوک سرور شہید سے سپیشل رپورٹر، نامہ نگار کے مطابق گزشتہ روز 3 بجے کے قریب سنانواں موڑ ملک کالونی کارہائشی خادم حسین جو کہ نزدیکی ملز مزدور ہے۔ گھر موجود نہ تھا۔ گھر میں صرف اس کی اکیلی بیٹی آسیہ بی بی15 سالہ موجود تھی۔اس کی ایک اور چھوٹی بیٹی گھر آئی تو دیکھا کہ اس کی بہن آسیہ بی بی ایک کمرے میں خون میں لت پت پڑی تھی۔ نامعلوم شخص یا افراد نے تیز دھار آلے سے اس کا گلہ کاٹ دیا ہوا تھا اور اس کے سر پر کوئی آہنی چیز مار کر اسے قتل کردیا۔بچی نے دیکھ کر شور مچایا۔ تو اہل محلہ اکٹھے ہوگئے ۔جنہوں نے ملز میں اسے باپ خاد م حسین گھلو کو اطلاع دی۔پولیس تھانہ سرورشہید موقع پر پہنچی۔کچھ ہی دیر میں ڈی ایس پی کوٹ ادو محمد مجاہد اقبال برمانی بھی موقع پر پہنچ گئے۔اطلاع کے باوجود بھی ہومی سائیڈ مظفرگڑھ کے اہلکار جائے وقوعہ پر نہ پہنچ سکے۔ ڈی ایس پی محمد مجاہد اقبال برمانی نے ڈیرہ غازیخان ہومی سائیڈ والوں کو بھی اطلاع دی لیکن ان کی گاڑی تین گھنٹے تک بھی وہاں نہ پہنچ سکی۔ جس پر شہریوں نے افسوس کا اظہار کیا۔ قانون کے مطابق مقامی پولیس نعش کو موقع سے نہیں اٹھا سکتی۔ جب تک ہومی سائیڈ والے موقع پر نہ پہنچیں۔ ڈی ایس پی محمد مجاہد اقبال برمانی نے بتایا کہ قتل کی اصل وجوہات کا پوسٹ مارٹم اور فرانزک رپورٹ کے بعد ہی پتہ چل سکے گا۔سردست تو یہی پتہ چل رہا ہے کہ قاتل نے لڑکی کا گلہ کاٹا ہے اور سر میں کوئی آہنی شے مار کر قتل کیا ہے۔ مقتولہ خود اور اس کا سارا خاندان نزدیکی ملز میں مزدوری کرتے ہیں ۔ اور کرایہ کے مکان میں رہائش پذیر تھے ۔ اور اصل رہائش شہر سلطان کی ہے۔ اوچ شریف سے نمائندہ خصوصی کے مطابق اوچ شریف میں گھومنے والا ذہنی معذور نوجوان سخت ترین سردی میں کانپتے کانپتے جاں بحق ہو گیا ہے ،نواحی علاقے محلہ جگ پورہ کا نوجوان شعیب سارا دن شہر میں گھومنے کے بعد پل للو والی کے مقام پر عباسیہ روڈ کے کنارے پڑے پتھروں پر سو گیا جسے سخت سردی میں کاپنتے دیکھ کر قریبی آبادی کے لوگوں نے کپڑا ڈالا لیکن سردی کے باعث زندگی کی بازی ہار گیا جس کی اطلاع مقامی پولیس کو اطلاع ملنے پر لاش ہسپتال منتقل کی دی ہے جس کے ورثاء نے لاش وصول کر لی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر