عالمی یوم جذام کے حوالے سے لپروسی ویک کا آغاز

عالمی یوم جذام کے حوالے سے لپروسی ویک کا آغاز

کراچی (اسٹاف رپورٹر) عالمی یوم جذام کے حوالے سے لپروسی ویک کا آغازہوگیا ہے۔ میری ایڈی لیڈ لیپروسی سینٹر کی انتظامیہ نے 65ویں عالمی یوم جذام کے موقع پر آنجہانی ڈاکٹر روتھ فاو کے گھر کو میوزیم میں تبدیل کردیا۔ میوزیم میں ڈاکٹر فاوکی تصاویر،اعزازات اور ان کے زیر استعمال کمرہ موجود ہے۔ 1996میں جذام کے مرض پر قابو پالیا گیا تھامگر اب ملک بھر میں 57ہزار رجسٹرڈ مریض موجود ہیں۔ماہرین صحت کے مطابق اندرون سندھ جذام کے مریضوں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔ڈاکٹرز نے بتایا کہ جذام کا جرثومہ ہواپرورش پاتا ہے اور انسانی جسم میں 20سال تک چھپا رہتا ہے۔عربی میں جذام ،ہندھی میں کوڑھ اور انگریزی میں لپروسی کہلائے جانے والے مرض کے اب بھی سالانہ 400کیسز پاکستان بھر سے رپورٹ ہورہے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر