نشتر ہسپتال میں سوائن فلو سے 2مزید ہلاکتیں، ایک اور ڈاکٹر بھی متاثر

نشتر ہسپتال میں سوائن فلو سے 2مزید ہلاکتیں، ایک اور ڈاکٹر بھی متاثر

ملتان(وقائع نگار)نشتر ہسپتال میں سوائن فلو میں مبتلا دو اور مریض اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں جس کے بعد مجموعی اموات کی تعداد38تک جاپہنچی ہے گزشتہ روز ہفتہ کو آئی سی یو وارڈ میں زیر علاج خانیوال کے رہائشی22سالہ وسیم اور32سالہ ممتاز بی بی نے سوائن فلو کے باعث دم توڑا ہے۔نشتر ہسپتال میں اس وقت13مریض داخل ہیں۔جس میں آئسولیشن وارڈ میں11اور آئی سی یو وارڈ میں2مریض داخل ہیں۔آئسولیشن وارڈ میں زیر علاج 5مریض جبکہ آئی سی یو وارڈ میں زیر علاج2مریض سوائن فلو(سیزنل انفلوئنزا ایچ ون این ون)پازیٹو ہیں۔ہفتہ کے روز ہی سوائن فلو کے شبہ میں داخل ہونے والے مریضوں کی مجموعی تعداد 252ہوگئی ہے۔نشتر ذرائع کے مطابق وارڈ نمبر4کے ایک ہاؤس آفیسر ڈاکٹر صدام میں بھی سوائن فلو کی تصدیق ہوئی ہے جو آئسولیشن وارڈ میں داخل ہے۔ڈاکٹر صدام نے سوائن فلو کی ویکسین نہیں لگوائی تھی۔وہ چھٹے ڈاکٹر ہیں جو اس مرض کا شکار ہوئے ہیں۔ڈاکٹروں کے مطابق ڈاکٹر صدام تیزی سے روبصحت ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ اول