جرمن فوج میں جنسی ہراساں کیے جانے کے واقعات میں 80 فیصد اضافہ

جرمن فوج میں جنسی ہراساں کیے جانے کے واقعات میں 80 فیصد اضافہ
جرمن فوج میں جنسی ہراساں کیے جانے کے واقعات میں 80 فیصد اضافہ

  

برلن(این این آئی) وفاقی جرمن فوج میں جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کے واقعات میں ماضی کے مقابلے میں 80 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔

میڈیارپورٹس کے مطابق جرمن وزارت دفاع نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ گزشتہ برس جرمن مسلح افواج میں جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کے 234 واقعات رپورٹ ہوئے۔ وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ ایسے واقعات میں اضافہ دراصل ان واقعات کے سدباب کی کوششوں اور ایسے مشتبہ حملوں کو رپورٹ کرنے میں اضافے سے مربوط ہے۔وفاقی جرمن فوج کے حکام کے مطابق گزشتہ برس جنسی زیادتی یا جنسی زیادتی کی کوشش کے 14 واقعات رپورٹ ہوئے، جو سن 2016 کے مقابلے میں 3 گنا زیادہ تھے جبکہ سن 2016ء میں ایسے فقط پانچ واقعات رپورٹ ہوئے تھے۔رپورٹ کے مطابق سن 2016ء میں جرمنی کی مسلح افواج میں جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کے 128 واقعات سامنے آئے تھے جب کہ گزشتہ برس یہ تعداد 234 تک پہنچ گئی۔

اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وفاقی فوج میں ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے ٹھوس اقدامات کیے جانے کی وجہ سے مبینہ جنسی حملوں کو رپورٹ کرنے میں اضافہ ہوا ہے، اس کے علاوہ فوجی حکام ماضی میں ہونے والے اس واقعات کی تحقیقات بھی کر رہے ہیں۔جرمن وزیر دفاع اْرزولا فان ڈیر لائن نے گزشتہ برس کہا تھا کہ ان اعداد و شمار کو فوج میں ایسے واقعات میں اضافے سے نہیں جوڑنا چاہیے کیونکہ ممکن ہے کہ ماضی میں ایسے واقعات رپورٹ ہی نہ ہوتے ہوں۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : بین الاقوامی