بجلی ‘ گیس بحران میں تیزی ‘ شہریوں کا پارہ ہائی ‘ مختلف شہروں میں مظاہرے

بجلی ‘ گیس بحران میں تیزی ‘ شہریوں کا پارہ ہائی ‘ مختلف شہروں میں مظاہرے

ملتان‘ڈیرہ غازیخان ‘ رحیم یار خان (سٹاف رپورٹر‘ سٹی رپورٹر‘نمائندہ پاکستان) میپکو ریجن کے 13 اضلاع میں اتوار کے روز بجلی کا بدترین بحران رہا۔ ملتان شہر کے درجنوں فیڈرز پر 5گھنٹے (بقیہ نمبر50صفحہ7پر )

سے زائد بجلی کی بندش نے چھٹی کے روز شہریوں کو معمولات زندگی سے دور رکھا۔صارفین کے احتجاج کے باوجود اتوار کے روز بجلی کی طویل بندش اور شٹ ڈاؤن کا سلسلہ جاری ہے۔ میپکو نے ریجن میں بجلی فراہم کرنے والے سینکڑوں فیڈرز پر 28سے 31 جنوری تک 4 گھنٹے کا شٹ ڈاؤن شیڈول جاری کررکھا ہے۔ ملتان شہر میں صارفین کی جانب سے ساڑھے چار بجے صبح سے ساڑھے آٹھ بجے صبح تک ابدالی روڈ‘ خیر پور بھٹہ‘ گارڈن ٹاؤن سمیت مختلف فیڈرز کی بندش کی شکایات سامنے آئی ہیں۔ دھند کو بہانہ اور جواز بناکر فیڈرز کی غیراعلانیہ بندش کا سلسلہ جاری ہے۔دوسری جانب سوئی گیس کی طویل بندش نے بھی شہریو ں کو مسائل سے دوچار کئے رکھا۔ ملتان اور گردونواح کے بیشتر علاقوں میں سوئی گیس نام کو نہیں تھی۔ صارفین نے اس صورتحال پر حکومت سے شدید احتجاج کیاہے۔ڈیرہ غازیخان سے سٹی رپورٹر کے مطابق شہر کے بلاک 37کے رہائشیوں کا چار ماہ سے سوئی گیس کی بند ش کے خلاف چولہے اور توے اٹھا کر احتجاجی مظاہرہ وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ اس سلسلہ میں مزید تفصیلات کے مطابق چار ماہ سے سوئی گیس کی بندش سے تنگ آکر شہر کے بلاک 37کے رہائشی احتجاج کے لئے سڑکوں پر نکل آئے اور محکمہ سوئی گیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی احتجاجی مظاہرین نے اس موقع پر سوئی گیس کے چولہے اور روٹی پکانے والے توے بھی اٹھا رکھے تھے احتجاجی مظاہرین شیخ محمد اسلم ،حمزہ قریشی ،چوہدری نعیم ،ضیاء اللہ میرانی ،شیخ عدنان مصطفی و دیگر کا کہنا تھا کہ 4ماہ سے ہمارے بلاک میں گیس نہیں ہے سوئی گیس نہ ہو نے کی وجہ سے بچوں کو اور ہمیں بغیر کھا نا کھائے سکول اور کام کاج کے لئے نکلنا پڑتا ہے ماہانہ بل بھی اسی طرح آرہے ہیں لیکن گیس نہیں آرہی ہے سوئی گیس کے دفتر جا کر بھی کئی بار درخواستیں دے چکے ہیں لیکن کو ئی شنوائی نہ ہو ئی ہے ہم وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان احمد بزدار سے مطالبہ کر تے ہیں کہ گیس کی بند ش کا نوٹس لے کر ہمارے بلاک میں سوئی گیس بحال کرائی جا ئے ۔۔رحیم یار خان سے نمائندہ پاکستان سوئی گیس کی بدترین لوڈشیڈنگ نے زندگی اجیرن بنادی ہے، گھریلو صارفین کیلئے گیس لوڈشیڈنگ کاکوئی شیڈول طے نہیں کیاگیا، گیس نہ ہونے کی وجہ سے گھریلوخواتین پریشان جبکہ سکول جانے والے بچے بھی بھوکے سکول جانے پرمجبورہیں گیس لوڈشیڈنگ کاٹائم مقررکیاجائے۔ ان خیالات کااظہارجنرل سیکرٹری ہادی عالم ویلفیئرسوسائٹی وچیئرمین انجمن تاجران ریلوے روڈ،پھول مارکیٹ بانوبازارچوہدری محمدبوٹاطاہرنے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ دن بھرصرف چند گھنٹوں کیلئے سوئی گیس فراہم کی جاتی ہے، مختصر دورانیے میں نہ توکھاناپک سکتا ہے اورنہ ہی کوئی دوسرے کام جبکہ اس شدیدسردی میں گیس نہ ہونے سے بہت پریشانی کاسامنا ہے ،شہری ہوٹلوں سے مہنگے داموں کھاناخریدکرکھانے پرمجبورہیں، گیس کی لوڈشیڈنگ کے باعث مہنگے داموں لکڑیاں،کوئلے اورگیس سلینڈربھروانابھی کسی اذیت سے کم نہیں ۔انہوں نے مزید کہاکہ موجودہ حکومت کوچاہیے کہ گیس کی لوڈشیڈنگ پرقابوپانے کیلئے جلد ازجلد اقدامات کرے تاکہ عوام کو شہری اذیت سے بچایا جا سکے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر