صادق آباد : لیڈی ڈاکٹر کی مبینہ غفلت ‘ غلط آپریشن سے خاتون کی حالت نازک

صادق آباد : لیڈی ڈاکٹر کی مبینہ غفلت ‘ غلط آپریشن سے خاتون کی حالت نازک

  

صادق آباد(نامہ نگار)پرائیویٹ ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹر نے ڈلیوری آپریشن کے دوران غفلت کی انتہا کردی ۔خاتون ایک ماہ سے زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا‘ہوگئی شیخ زید ہسپتال کے ڈاکٹروں نے دوبارہ آپریشن کا مشورہ دیدیا‘ لیڈی ڈاکٹر سے رجوع کرنے پر سنگین نتائج کی دھمکیاں ‘ہسپتال سے نکا ل دیا تفصیل کے مطابق بھونگ کے رہائشی دلیپ کمار ولد سوریا جی قوم مینگوال نے اے ایس پی سرکل(بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

پولیس کو درخواست دیتے ہوئے الزام عائد کیا کہ وہ اپنی بیوی پونم جی کی ڈلیوری کروانے کیلئے ہسپتال روڈ پر واقع پرائیویٹ ہسپتال آمنہ گائنی کلینک صادق آباد لیکر گیا ، جہاں پر موجود ڈاکٹر طاہرہ چوہان نے چیک اپ کیا اور کہاکہ ڈلیوری نارمل ہو جائے گی ، چند گھنٹے بعد ڈاکٹر نے کہا کہ فوری آپریشن کرنا پڑے گا بچے اور ماں کی جان کو خطرہ ہے ، جس پر ڈاکٹر نے ہم سے بھاری رقم لے لی اور میری بیوی کا آپریشن کر دیا،چھٹی ملنے کے بعد ہم گھر چلے گئے ۔ بیوی کے آپریشن والی جگہ پر درد ہونا شروع ہو گیا اور خون آنے لگا، ڈاکٹر سے دوبارہ رجوع کیا تو ڈاکٹر نے میڈیسن لکھ دی ، مسلسل ایک ماہ تک درد ختم ہوا نہ خون آنا بند ہوا، جس پر میں اپنی بیوی کو لیکر شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان لے گیا،جہاں پر موجو د ڈاکٹروں نے چیک اپ کے بعد بتایا کہ آپریشن ٹھیک نہیں ہوا ہے لہذا دوبارہ آپریشن کرنا پڑے گا، دوبارہ ڈاکٹر طاہرہ چوہان سے رجوع کیا تو اس نے سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے ہوئے ہسپتال سے نکال دیا ،دلیپ کمار نے بتایا کہ ڈاکٹر نے آپریشن میں غفلت اورلاپرواہی کا مظاہرہ کیا ہے میری بیوی زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہو کر ہسپتال میں موجود ہے ،اس نے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار‘ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹریاسمین راشد‘ کمشنر بہاول پور ‘ ڈی سی رحیم یارخان اور اے ایس پی صادق آباد سے مطالبہ کیا کہ غفلت اور لاپرواہی کا مظاہرہ کرنیوالی لیڈی ڈاکٹر کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -