اتواربازاروں میں بچوں سے مشقت لینے والوں کے سٹال منسوخ

اتواربازاروں میں بچوں سے مشقت لینے والوں کے سٹال منسوخ

لاہور(اپنے نمائندے سے) مشیر وزیراعلیٰ برائے سیاسی امور محمد اکرم چوہدری نے شادمان اتوار بازار کا دورہ کیا ۔ پھلوں، سبزیوں، دالوں، گوشت کی قیمتوں اور معیار کو چیک کیا۔انہوں نے سکیورٹی اور صفائی کے معاملات پر اطمینان کا اظہار کیا۔واک تھرو گیٹ کی خرابی کا نوٹس، پولیس اور سول ڈیفنس کے مزید اہلکار تعینات کروا دیئے گئے ۔اس موقع پر محمد اکرم چوہدری کا کہنا تھا کہ سٹالوں پر کم عمر بچوں کو کام نہیں کرنے دیا جائے گا۔ کم عمر بچوں سے کام کروانے پر متعدد سٹال ہٹوا دیئے گئے ۔ انہوں نے کہاکہ بچوں سے کام کروانے والے کو آئندہ لائسنس نہیں دیا جائے گا۔ اتوار بازار میں خریداروں کے لیے پینے کے پانی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے خریداری کے لیے آنے والے لوگوں کی شکایات سنیں اور موقع پر ہدایات جاری کیں۔دریں اثناء پاکستان سروے کے مطابق اتوار بازاروں میں ناقص اشیاء کی فروخت پرشہریوں نے شکایات کے انبار لگا دیے ۔شہریوں کا کہنا تھا کہ سستا اتوار بازار صرف نام کا رہ گیا، متعلقہ اداروں کو اتوار بازار میں سبزیوں کی قیمتوں میں کمی کرنی چاہئے مگر ایسا نہیں ہے، مہنگائی کی گاڑی بدستور چلتی جا رہی ہے اور غریب عوام پستے جا رہے ہیں۔سب سے زیادہ اضافہ لیموں کی قیمت میں ہوا جو بازار میں بہت تھوڑی مقدار میں دستیاب تھا۔ گاجر بھی کم سٹالز پر نظر آئیں۔ آلو18، پیاز 30، لہسن چائنہ 140، لیموں 80، لہسن دیسی 100، چقندر 70، ادرک 200، سبز مرچ 90، سبز دھنیا 60، پودینہ 45، سبز پیاز 50روپے پاؤ، مولی 25، گاجر 30 ، ، سفید سیب 60-90روپے، سیب کالا کوہلو 140روپے، انار قندھاری 160روپے کے حساب سے فروخت ہوا۔

، گرے فروٹ 40روپے، مسمی 120روپے درجن، انگور سندر خانی 140، انگور ٹافی 160روپے، کیلا اول 60روپے فی کلو تک فروخت ہو رہے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1