ملک بھر میں جاری دھند کے باعث 14 ٹرینیں گھنٹوں تاخیر کا شکار

ملک بھر میں جاری دھند کے باعث 14 ٹرینیں گھنٹوں تاخیر کا شکار

لاہور(این این آئی) ملک بھر میں جاری دھند کے سلسلے کی وجہ سے 14 ٹرینیں گھنٹوں تاخیر کا شکار رہیں جبکہ اندرون وبیرون ملک آنے جانیوالی 9پروازیں منسوخ اور8پروازیں تاخیر کا شکارہوئیں،ٹرینیں اور پروازیں منسوخ اور لیٹ ہونے کی وجہ سے مسافروں اور اپنے پیاروں کو لینے اور چھوڑنے آنے والے افراد کو پریشانی کا سامنا رہا۔تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں دھند کی وجہ سے کراچی،کوئٹہ،فیصل آباد اور دیگر سیکشنوں پر چلنے والی ٹرینیں کئی گھنٹوں کی تاخیر سے اپنی اپنی منزل پر پہنچ رہی ہیں،کراچی سے لاہور آنے والی کراچی سے آنے والی ٹرین قراقرم ایکسپریس سات گھنٹے تاخیر کا شکاررہی،پاک بزنس ایکسپریس ساڑھے چار گھنٹے تاخیر کا شکاررہی،کراچی سے آنے والی ٹرین شاہ حسین ایکسپریس ساڑھے چار گھنٹے تاخیر کا شکاررہی،کراچی سے آنے والی عوام ایکسپریس ایک گھنٹہ تاخیرکا شکاررہی ،علامہ اقبال ایک گھنٹہ پنتالیس منٹ تاخیر کاشکاررہی،تیزگام ایک گھنٹہ پچاس منٹ تاخیر کا شکار رہی،کراچی ایکسپریس دو گھنٹے تاخیر کا شکار رہی،کراچی جانے والی خیبر میل تیس منٹ تاخیر سے روانہ ہوئی،ملتان سے آنے والی ٹرین موسی پاک تیس منٹ تاخیر کا شکاررہی،کوئٹہ سے لاہور آنے والی جعفر ایکسپریس ایک گھنٹہ پندرہ منٹ تاخیر کا شکار رہی اورفیصل آباد سے لاہور آنے والی غوری ایکسپریس ایک گھنٹہ تاخیر کا شکاررہی ،ٹرینیں لیٹ ہونے سے مسافر گھنٹوں پلیٹ فارموں پر اپنی اپنی ٹرین چلنے کا انتظار کرتے رہے۔دوسری جانب اندرون وبیرون ملک آنے جانے والی آنے جانے والی 9 پروازیں منسوخ اور8 پروازیں تاخیر کا شکار رہیں،لاہور سے اسلام آباد جانے والی پرواز پی کے 654 منسوخ،اسلام آباد سے آنے والی پرواز پی کے 655 اور 656 منسوخ،لاہور سے کراچی جانے والی پرواز پی کے 317 ،پی کے 583 اور کراچی جانے والی پرواز پی کے 313 منسوخ جبکہ کراچی سے لاہورآنے والی پرواز پی کے 582 منسوخ ، میلان سے لاہورآنے والی پرواز پی کے 720 منسوخ اورمسقط سے آنے والی پرواز پی اے 230 منسوخ رہیں جبکہ اندرون وبیرون ملک آنے جانے والی جو پروازیں تاخیر کا شکاررہیں ان میں جدہ سے لاہور آنے والی ائیربلیو کی پ پرواز پی اے 471 چالیس منٹ تاخیر کا شکار رہی اور مسقط جانے والی پرواز پی کے 229 ڈیرھ گھنٹے تاخیر سے روانہ ہوئی اورتحران جانے والی پرواز ڈبلیو 1194 ایک گھنٹہ پندرہ منٹ تاخیر سے روانہ ہوئیں۔

مزید : صفحہ آخر