حکومتوں کے ذمہ پاور ڈویژن کے152ارب واجبات کا انکشاف

حکومتوں کے ذمہ پاور ڈویژن کے152ارب واجبات کا انکشاف

اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی و صوبائی حکومتوں اور آزاد جموں وکشمیر حکومت کے ذمہ پاور ڈویژن کے152ارب روپے سے زائد واجبات ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ دستاویزات کے مطابق چاروں صوبوں ، وفاق ، آزاد جموں کشمیر حکومت کے ذمہ پاور ڈویژن کے مجموعی طور 152ارب 77کروڑ 19لاکھ 98 ہزار 835روپے واجب الادا ہیں۔ وفاقی حکومت کے ذمے 10ارب 64کروڑ 30لاکھ23ہزار 349 روپے واجب الادا ہیں، اسی طرح آزاد جموں وکشمیر حکومت کے ذمہ 112ارب 94کروڑ، 29لاکھ 8ہزار 767روپے واجب الادا ہیں۔پنجاب حکومت کے ذمہ 5ارب،94کروڑ 56لاکھ 83ہزار 843روپے ، سندھ حکومت کے ذمے 7ارب74کروڑ20لاکھ 48ہزار 473روپے اور خیبر پختونخوا حکومت کے ذمے 1ارب 90کروڑ 58لاکھ 70ہزار158روپے واجب الادا ہیں جبکہ بلوچستان حکومت کے ذمے 14ارب 44کروڑ 10لاکھ 74ہزار 245روپے واجب الادا ہیں۔ملک بھر میں گزشتہ3سال کے دوران 74ارب روپے سے زائد مالیت کی بجلی چوری ہو گئی۔سرکاری دستاویزات کے مطابق گزشتہ3سال میں لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی (لیسکو ) میں8ارب 48کروڑ10لاکھ روپے مالیت کے 59کروڑ80لاکھ یونٹس چوری ہوئے ۔گوجرانوالہ الیکٹرک سپلائی کمپنی(گیپکو)میں گزشتہ3سال کے دوران 3.52ارب روپے مالیت کے431ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔فیصل آبادلیکٹرک سپلائی کمپنی(فیسکو)میں گزشتہ3سال کے دوران 3.216ارب روپے مالیت کے3216ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔اسلام آبادلیکٹرک سپلائی کمپنی(آئیسکو) میں گزشتہ3سال کے دوران 1.204ارب روپے مالیت کے71ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔ملتان الیکٹرک سپلائی کمپنی(میپکو) میں6.912ارب روپے مالیت کے758ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔پشاور الیکٹرک سپلائی کمپنی(پیسکو) میں گزشتہ3سال کے دوران 11.823ارب روپے مالیت کے1160ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے ۔ حیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی(حیسکو) میں گزشتہ3سال کے دوران 27.859ارب روپے مالیت کے2475ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔سکھر الیکٹرک سپلائی کمپنی(سیپکو) میں گزشتہ3سال کے دوران11.131ارب روپے مالیت کے1187ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔ کوئٹہ الیکٹرک سپلائی کمپنی میں گزشتہ3سال کے دوران32کروڑروپے مالیت کے20ملین بجلی کے یونٹس چوری ہوئے۔ بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں 74.457ارب روپے میں سے صرف 26.333ارب روپے بجلی چوروں سے ریکور کر سکیں۔

مزید : صفحہ آخر