سعیدغنی، وسیم اختراستعفیٰ دیں پھرمیں دوں گا،فردوس شمیم نقوی

سعیدغنی، وسیم اختراستعفیٰ دیں پھرمیں دوں گا،فردوس شمیم نقوی

کراچی(اسٹاف رپورٹر )سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ سعید غنی نے استعفے کا اعلان کیا، چیلنج کرتا ہوں سعیدغنی، وسیم اختراستعفیٰ دیں پھرمیں دوں گا،کراچی میں کل کاروباری حلقوں میں بے چینی پیدا کی گئی،سندھ حکومت نے ایس بی سی اے کوٹھیکے پردیا ہوا ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے میں کہیں نہیں لکھا کہ500 عمارتیں کو گرایا جائے،فیصلے میں کہا گیا ہے کہ کراچی کو اپنی اصل شکل میں بحال کیا جائے ۔اتوارکوانصاف ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں کہا کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں چوربیٹھے ہیں، ایس بی سی اے میں پہلے منظورکاکا تھے اب افتخارقائم خانی ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کراچی کو اس کی اصل شکل میں واپس لائے گی۔ارکان اسمبلی استعفیٰ کی بات تو کرتے ہیں لیکن فیصلوں کو پڑھتے تک نہیں ہیں۔ جب شہر میں عمارتین بن رہی تھیں تو اس وقت افسران کہاں تھے ؟۔انہوں نے کہا کہ جن افسران کی موجودگی میں عمارتیں بنائی گئی ہیں ان کے خلاف بھی سخت کارروائی ہونی چاہیے۔ جب افسران کی جیبیں گرم ہوتی ہیں تو ان کی آنکھیں بند ہو جاتی ہیں۔فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ بڑے عہدوں پر بیٹھے لوگ مافیا کا حصہ ہیں جو اپنے مفادات کے حصول کے لیے کام کر رہے ہیں جب کہ گیارہ سال سے حکومت کرنے والوں نے کراچی کا برا حال کر دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پرامن کراچی کے خلاف سازشیں کی جا رہی ہیں جب کہ لوگوں نے کراچی کو لوٹ کھسوٹ کا ذریعہ بنایا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم سازشوں کو بے نقاب کرنے آئے ہیں۔ یہاں کروڑوں روپے منی لانڈرنگ کے ذریعے ملک سے باہر بھیجے جا رہے ہیں۔فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ شادی ہال ہٹانے کے لیے آرڈرکیسے پاس ہوئے، کوئی بلڈنگ ایس بی سی اے کی منظوری کے بغیرنہیں بنائی جاسکتی۔سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں چوربیٹھے ہیں، تمام چوروں کوسندھ حکومت نے فرارکرایا ہے۔فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ عدالتی احکامات میں کسی 5 سو شادی ہال گرانے کا آرڈرنہیں، کراچی میں کل کاروباری حلقوں میں بے چینی پیدا کی گئی۔

مزید : کراچی صفحہ اول