احسن اقبال کی کھلی کچہری، کسانوں نے شکایات کے انبار لگادئیے

احسن اقبال کی کھلی کچہری، کسانوں نے شکایات کے انبار لگادئیے
احسن اقبال کی کھلی کچہری، کسانوں نے شکایات کے انبار لگادئیے

  

نارووال (ویب ڈیسک) سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کی دربار کرتارپور میں کھلی کچہری، لوگوں نے راہداری منصوبے کی پرجگہ ایکوئر کرنے اور کھڑی فصلیں تباہ ہونے کے حوالے سے شکایات کے انبار لگادئیے۔

روزنامہ خبریں کے مطابق زمینداروں نے بتایا کہ ان کی زمینوں پر کھڑی تیار فصلیں تباہ ہورہی ہیں اور زمینوں کے حوالے سے ابھی تک کسانوں کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔ احسن اقبال نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ اس منصوبے کو بنانے کے لئے حکومت نے کوئی منصوبہ بندی نہیں کی۔ ہم نے پچھلے 5 سالوں میں نارووال میں 3 یونیورسٹیاں بنائیں جن کے لئے ایکوئر کی جانے والی جگہ کے مالکان اور اہل علاقہ کو اعتماد میں لیا۔ اس حکومت نے آپ سے بات چیت نہیں کی جس سے آپ کی کھڑی فصلوں کا نقصان ہوا، آپ کی جائزہ شکایات متعلقہ احکام بالا تک پہنچادوں گا اور اس منصوبے کیلئے جو زمین درکار ہوگی نمائندوں سے مل کر معاوضہ طے کریں گے۔

احسن اقبال نے کہا کہ یہ ایک ایسا منصوبہ ہے جس سے پاکستان کا نام دنیا میں روشن ہوگا ۔ پاکستان دنیا کو ایک اچھا پیغام دینے جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف بڑی ناانصافی جماعت بن چکی ہے، یہ حکومت غریبوں کی زندگی تباہ کرکے اپنے محلات کی حفاظت کررہی ہے، ناجائز تعمیر کے نام پر غریبوں کی جھگیوں پر بلڈوزر چلائے گئے جبکہ عمران خان کا تین سو کنال کا گھر اس طرح کھڑا ہے حکمرانوں کو پتہ نہیں غریب کی بددعا عرش ہلادیتی ہے۔ انہوں نے متاثرین کو یقین دہانی کروائی کہ ہمارے فوج کے سربراہ خود آپ کے وکیل بن کر حکومت سے بات کریں گے تاکہ کسی کے ساتھ ناانصافی نہ ہو۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -نارووال -