صہیونی جیل میں کم سنوں کو برہنہ تشدد کا نشانہ بنائے جانے کا انکشاف

صہیونی جیل میں کم سنوں کو برہنہ تشدد کا نشانہ بنائے جانے کا انکشاف

  



رام اللہ(این این آئی)فلسطین میں انسانی حقوق کی تنظیموں نے صہیونی عقوبت خانوں میں فلسطینی بچوں کے ساتھ غیرانسانی سلوک کیے جانے کے لرزہ خیز واقعات کا انکشاف کیا ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق فلسطینی محکمہ امور اسیران نے بتایا کہ صہیونی زندانوں میں قید کیے گئے کم سن فلسطینی بچوں کوبرہنہ کرکے وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔بیان میں بتایا گیا کہ حال ہی میں صہیونی وحشی جلادوں نے عوفر قید خانے میں ڈالے گئے خلیل جبارین کو برہنہ کرکے بری طرح مارا پیٹا گیا۔خلیل جبارین نے بتایا کہ اسے عوفر جیل سے 'دامون' جیل میں لے جایا گیا جہاں اسیران کی حالت ناقابل بیان حد تک خراب ہے۔ جیلوں کی حالت اتنی خراب ہے کہ وہ انسانوں کے رہنے کے قابل نہیں۔ کم سن فلسطینی قیدیوں کو برہنہ کرکے تشدد کا نشانہ بنایا جاتا اور ان سے اعتراف جرم کرانے کے لیے تشدد کے خوناک ہتھکنڈے استعمال کیے جاتے ہیں۔بیان میں بتایا گیا ہے کہ اسرائیلی جیلوں میں قید ایک دوسرے فلسطینی بچے ریاض العمور کو بھی برہنہ کرکے وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔

مزید : عالمی منظر