بھارت، 25ہزار لاوارث لاشوں کی تدفین کرنیولاے شریف چاچا کیلئے پد ما شری ایوارڈ

بھارت، 25ہزار لاوارث لاشوں کی تدفین کرنیولاے شریف چاچا کیلئے پد ما شری ایوارڈ

  

ایودھیا(آئی این پی) بھارت میں ایودھیا کے محمد شریف کو پدم شری ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔ انہوں نے فسادات کے دوران اپنے فرزند کو کھونے کے بعد 25 ہزار سے زائد لاوارث نعشوں کی اپنے خرچ پر تدفین انجام دی ہے۔ ایودھیا میں شریف چاچا کے نام سے مشہور سائیکلمکینک اس وقت مقبول ہوگئے جب انہوں نے ٹی وی شو ستیم جیوتے میں حصہ لیا۔ ان کی زندگی کی کہانی جذباتی اور دل کو چھولینے والی ہے۔ گزشتہ 20 سال سے وہ اترپردیش کے ضلع ایودھیا میں لاوارث نعشوں کی تجہیز و تکفین عمل میں لارہے ہیں۔ ان کا روز کا معمول یہ ہے کہ وہ قبرستانوں کے چکر لگاتے ہیں اور لاوارث نعشوں کیلئے قبروں کا انتظام کرتے ہیں۔ عامر خان کے ٹی وی شو میں حصہ لیتے ہوئے انہوں نے اپنی زندگی کی دردبھری کہانی سنائی تھی۔ عامر خان نے خود بھی شریف چاچا کے بارے میں خفیہ طور پر معلومات حاصل کی تھی۔ ان کی کہانی کو سن کر وہ بھی جذباتی ہوگئے تھے۔ شریف چاچا نہ صرف مسلم لاوارث نعشوں کی تدفین کرتے تھے بلکہ ہندو لاوارث کی نعشوں کی آخری رسومات انجام دیتے تھے۔ سکھوں اور عیسائیوں کی بھی لاوارث نعشوں کی بھی انہوں نے آخری رسومات انجام دی ہے۔ ان کی اپنی کہانی بڑی تکلیف دہ ہے۔ فسادات کے دوران ان کے 28 سالہ لڑکے کی نعش ریلوے ٹریک پر دستیاب ہوئی۔ ضلع سلطان پور میں فسادات بھڑک اٹھے تھے۔ بابری مسجد شہادت کے بعد وہ فسادات میں اپنے بیٹے سے محروم ہوگئے۔ اس واقعہ نے ان کی زندگی بدل دی اور وہ اپنے ضلع میں جہاں کہیں بھی لاوارث نعشوں کے بارے میں اطلاع ملتی ان نعشوں کیلئے مناسب جگہ تلاش کرکے تدفین عمل میں لاتے۔ بلالحاظ مذہب و ملت انہوں نے 25 ہزار نعشوں کیلئے انتظامات کئے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -