سوات میں خواجہ سراء اب ماحول دوست شاپنگ بیگز تیار کرینگے

  سوات میں خواجہ سراء اب ماحول دوست شاپنگ بیگز تیار کرینگے

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)محکمہ سماجی بہبود خیبر پختونخوانے ضلع سوات میں پلاسٹک شاپنگ بیگ کے استعمال کی حوصلہ شکنی کے لئے خواجہ سراء برادری کے ساتھ مل کر ایک نیا منصوبہ شروع کیا ہے جس کے تحت خواجہ سراء ضلعی انتظامیہ کی تعاون سے سوات میں کپڑے کے ماحول دوست شاپنگ بیگز تیار کرینگے۔ ڈسٹرکٹ سوشل ویلفئیر آفیسر نصرت اقبال کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر خواجہ سراؤں کو 32 سلائی مشینیں فراہم کردی گئی ہیں، منصوبے کا مقصد خواجہ سراؤں کو معاشرے میں روزگار کے متبادل مواقع فراہم کرنا اور پلاسٹک کے شاپنگ بیگز کا خاتمہ ہے، ان کا کہنا تھا کہ ابتدائی طور پر ضلعی انتظامیہ خواجہ سراؤں کو خام مال فراہم کرنے کے ساتھ ان سے تیار کردہ کپڑے کے شاپنگ بیگز خریدیگی، جنھیں بعد میں مارکیٹ میں فروخت کیا جائیگا۔ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر سوات محمد زمین خان نے منصوبے کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کوشش ہے کہ خواجہ سراوں کے تمام مسائل جلد سے جلد حل کرائیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ضلعی انتظامیہ منصوبے کے سارے عمل کی نگرانی کرے گی، جس سے آنے والے وقت میں پلاسٹک کے شاپنگ بیگز پر پابندی عائد ہوگی جس سے قدرتی حسن برقرار رکھنے میں مدد ملے گی۔ انوائرمینٹل پروٹیکشن سوسائٹی کے نمائندے محمد حسیب خان نے خواجہ سراؤں کے لئے شروع کئے گئے اس منصوبے کو سراہا اور کہا ان کی کوشش ہوگی کہ وہ اس منصوبے کو آگے لے جانے میں اپنی معاونت فراہم کریں۔ اور بیوٹیشن کورسز میں بھی خواجہ سراوں کو تربیت فراہم کرینگے۔خواجہ سراء برادری کی نمائندہ نادیہ کا کہنا تھا کہ وہ اس منصوبے سے بہت خوش ہیں کیونکہ یہ پیشہ عمر بھر کیا جاسکتا ہے، جبکہ عمر بڑھنے کے ساتھ رقص کے پروگراموں میں ہمیشہ شرکت نہیں کرسکتے۔ ان کا کہنا تھا کہ بڑھاپے میں اس طرح کے منصوبے سے انہیں زندگی گزارنے میں معاونت ملے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر