کم وزن روٹی فروخت کرنے والے نانبائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن جاری

کم وزن روٹی فروخت کرنے والے نانبائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن جاری

  



پشاور(سٹی رپورٹر) ضلعی انتظامیہ پشاورکاکم وزن روٹی فروخت کرنے والے نانبائیوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے اور پشاور کے مختلف علاقوں سے مزید72 نانبائیوں کو گرفتار کر کے جیل منتقل کر دیاگیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پشاور میں پکی روٹی 115 گرام کاسرکاری نرخ 10 روپے مقرر ہے اور اس کا باقاعدہ طور پر مشاورت سے ضلعی انتظامیہ نے نوٹیفیکیشن جاری کیا ہواہے۔ اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر پشاور محمد علی اصغر کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر (شاہ عالم) ڈاکٹر احتشام الحق نے پجگی روڈ پر مختلف نانبائیوں کی دکانوں میں روٹی کے وزن کا معائنہ کیا۔ اسسٹنٹ کمشنر (متنی)رضوانہ ڈار نے رنگ روڈ اور گرد ونواح، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر (کینٹ) گلشن آرا نے صدر کے مختلف بازاروں، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر (پی ڈی اے) مِنیٰ ظاہر نے حیات آباد کی مختلف مارکیٹوں، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر (ٹاؤن) عبدالولی نے تہکال، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر (سٹی) شہاب الدین نے سول کواٹر، بھانہ ماڑی اور رامداس، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر (شاہ عالم)محمد شفیق آفریدی نے چارسدہ روڈ جبکہ ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر (بڈھ بیر) حبیب اللہ نے کو ہاٹ روڈ پر مختلف نانبائیوں کی دکانوں میں روٹی کے وزن اور قیمت کا معائنہ کیا۔کاروائیوں کے دوران مجموعی طور پر کم وزن روٹی فروخت کرنے اور 15 روپے کی روٹی فروخت کرنے پر مزید72 نانبائیوں کو گرفتار کر کے جیل منتقل کر دیا۔ ڈپٹی کمشنر پشاور محمد علی اصغر کے مطابق پشاور میں 10 روپے روٹی کا وزن 115 گرام مقرر ہے اور اس ضمن میں نانبائیوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ سرکاری نرخ نامے کے مطابق روٹی فروخت کریں بصورت دیگر قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی جبکہ 15 روپے کی روٹی فروخت کرنے والوں کے خلاف بھی قانونی کاروائی کی جائے گی۔ ضلعی انتظامیہ کے مطابق گرفتار نانبائیوں کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر