نواز شریف کی طبی رپورٹ میں دل کی شدید بیماریوں کی نشاندہی، علاج سے متعلق وضاحت طلب کر لی: شہزاد اکبر

نواز شریف کی طبی رپورٹ میں دل کی شدید بیماریوں کی نشاندہی، علاج سے متعلق ...

  



لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے بتایا ہے کہ نوازشریف آئندہ چند روز میں ہسپتال داخل ہو جائیں گے جہاں ان کے دل کا علاج کیا جائے گا۔ٹوئٹر بیان میں ڈاکٹر عدنان نے لکھا کہ نواز شریف کارڈیک علاج کیلئے ہسپتال میں داخل ہوں گے۔ ان کی حالیہ آنے والی روبیڈیم کارڈیک پیٹ سکین کی رپورٹ میں دل کی شدید بیماریوں کی نشاندہی ہوئی ہے۔ڈاکٹر عدنان نے بتایا کہ نواز شریف کے دل کا علاج کرنے والی ٹیم نے اہم پیچیدہ کورونری شریانوں میں رکاوٹوں کا علاج کرنے کیلئے کارڈیک کیتھیٹائزیشن کا منصوبہ بنایا ہے۔

نوازشریف

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وزیراعظم کے معاون خصوصی احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ نواز شریف کی جانب سے پنجاب حکومت کو صرف ایک سرٹیفکیٹ بھیج دیا گیا ہے جس پر حکومت نے نوازشریف اور ان کی قانونی ٹیم سے وضاحت مانگی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی ضمانت پر 4ہفتے کا وقت گزر چکا اور انکی جانب سے جو رپورٹس بھیجی گئی ہیں ان میں سے دراصل رپورٹ کوئی نہیں ہے، پنجاب حکومت کو صرف ایک سرٹیفکیٹ بھیج دیا گیا ہے،میڈیکل رپورٹس اس سرٹیفکیٹ کیساتھ منسلک نہیں ہیں، حکومت نے نواز شریف اور انکی قانونی ٹیم سے پوچھا ہے کہ جس علاج کیلئے آپ گئے ہیں وہ بتائیں کتنا ہوا ہے، نواز شریف کے معاملے پر فیصلہ ضرور ہونا چاہیے، یہاں نواز شریف کے پلیٹ لیٹس پر لمحہ بہ لمحہ آگاہ کیا جاتا تھا، جب سے نواز شریف باہر گئے ہیں، اس معاملے پر مکمل اندھیرا ہے۔ معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ احتساب کا عمل نہ کبھی سست تھا اور نہ ہی بہت تیز،احتساب کے عمل میں بہتری کے لئے کچھ ترامیم کی ہیں، نیب کا کوئی آرڈیننس واپس نہیں لیا گیا، نیب آرڈیننس 4 ماہ تک موجود ہے اور اس میں توسیع بھی ہوسکتی ہے۔

شہزاداکبر

مزید : صفحہ اول