پی سی بی کی جانب سے فاسٹ باؤلر عمر گل کے اعزاز میں تقریب

  پی سی بی کی جانب سے فاسٹ باؤلر عمر گل کے اعزاز میں تقریب

  



لاہور(سپورٹس رپورٹر)پاکستان کرکٹ بورڈکی جانب سے فاسٹ باؤلر عمر گل کے اعزاز میں تقریب کا اہتمام کیا گیا۔اس موقع پر چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے فاسٹ باؤلرعمر گل کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے انہیں اعزازی شیلڈ سے نوازا۔ تقریب کااہتمام پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان سیریز کے تیسرے اور آخری ٹی ٹونٹی میچ والے دن کیا گیا۔عمر گل نے انگلینڈ میں کھیلے گئے آئی سی سی ٹی ٹونٹی ورلڈکپ 2009 میں نیوزی لینڈ کے خلاف 3 اوورز میں 6 رنز کے عوض 5 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی تھی جو کہ اس وقت ایک عالمی ریکارڈ تھا۔ عمر گل نے ایونٹ میں سب سے زیادہ 13 وکٹیں حاصل کی تھیں۔ میگا ایونٹ کے فائنل میں پاکستان نے سری لنکا کو 8وکٹوں سے شکست دی تھی۔عمر گل کا یہ ورلڈریکارڈ اگست 2011 میں سری لنکا کے اجنتھا مینڈس نے اس وقت توڑا جب انہوں نے آسٹریلیا کے خلاف پالی کیلے میں 16 رنز کے عوض 6 وکٹیں حاصل کی تھیں۔ ٹی ٹونٹی کرکٹ میں فی الحال بہترین باؤلنگ کا ریکارڈ بھارت کے دیپک چہار کے پاس ہے۔انہوں نے بنگلہ دیش کے خلاف نومبر 2019 میں 7رنز دے کر 6 وکٹیں حاصل کررکھی ہیں۔ فاسٹ باؤلر عمر گل نے 2013 میں ایک بار پھر ٹی ٹونٹی کرکٹ کے ایک میچ میں 5 وکٹیں حاصل کی تھیں۔ انہوں نے سنچورین میں جنوبی افریقہ کے خلاف 6رنز کے عوض 5 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی تھی۔عمر گل نے کہا کہ انہوں نے اپنے ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل کرکٹ کیرئیر میں پاکستان کے لیے زیادہ سے زیادہ کامیابیاں سمیٹنے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ انہیں پاکستان کی نمائندگی کرنے پر فخر ہیں۔

عمر گل نے کہا کہ وہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے معترف ہیں جنہوں نے ان کی خدمات کے اعتراف میں انہیں اعزاز سے نوازا ہے۔ فاسٹ باؤلر نے کہاکہ پاکستان کرکٹ بورڈ میں تبدیلی واضح ہے، یہاں ملک کی خدمت کرنے والے کرکٹرز کو نوازا جانا خوش آئندہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان اقدامات سے نہ صرف کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے بلکہ نوجوانوں میں ملک کی خدمت کرنے کا جذبہ بڑھتا ہے۔پی سی بی اس سے قبل سری لنکا کے خلاف راولپنڈی ٹیسٹ میں جاوید میانداداور کراچی ٹیسٹ میں سلیم یوسف اور راشد خان کو اعزاز سے نواز چکا ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی