مہمند،محکمہ زکوۃ کے عملے کی تنخوائیں 7 ماہ سے بند

مہمند،محکمہ زکوۃ کے عملے کی تنخوائیں 7 ماہ سے بند

  



مہمند(نمائندہ پاکستان) ضلع مہمند کے محکمہ زکوۃ کی سٹاف کی تنخواہیں گزشتہ 7ماہ سے بند۔ ملازمین فاقہ کشی پر مجبور۔ بچے سکول چھوڑنے پر مجبور۔باربار یقین دہائیوں کے باوجود تنخواہیں نہ مل سکے۔ ضلع مہمند کے محکمہ زکوۃ کی آڈٹ اور اے ڈی پی کے درجنوں ملازمین کی تنخواہیں گزشتہ 7ماہ سے بند ہیں۔ملازمین باقاعدگی سے اپنا ڈیوٹی انجام دینے کے باوجود انکو تنخواہیں بند کردی گئی ہیں جس کی وجہ سے انکے چولہے ٹھنڈے پڑگئے ہیں اور ملازمین فاقہ کشی پر مجبور ہوگئے ہیں۔ کئی ماہ کی تنخواہیں دینے کیلئے محکمہ کے اعلی حکام کی باربار اجلاس ہوئے مگر ابھی تک تنخواہیں نہیں دی گئی۔ جس کی وجہ سے ان سٹاف کے بچے سکول کی فیس ادانہ کرنے کیوجہ سے تعلیم چھوڑنے پر مجبور ہوگئے ہیں ملازمین کے مطابق انکے بینک اکاؤنٹ باقاعدہ موجود ہیں مگر ان کے تنخواہیں بند کرکے انکو ذہنی اذیت دی جارہی ہیں اور باقاعدہ ڈیوٹی انجام دینے کے باوجود تنخواہیں بند کردی گئی ہیں۔دوردراز علاقوں سے تعلق رکھنے والے ملازمین کیساتھ دفتر آنے تک کرایہ نہیں ہوتا جبکہ دوکانداروں نے انکو قرض سودا دینا بھی بند کردیا ہے۔

مزید : صفحہ اول