ہنگو، منصوبوں کا جائزہ فزیکل آڈٹ رپورٹ جاری

ہنگو، منصوبوں کا جائزہ فزیکل آڈٹ رپورٹ جاری

  



ہنگو(بیورورپورٹ) سینٹر فار پیس اینڈڈویلپمینٹ انیشیٹوز (سی پی ڈی آئی) نے یوتھ ویلفئرینگربلڈڈونر ایسوسی ایشن کے اشتراک سے ترقیاتی اسکیموں کا جا ئزہ یعنی فزیکل آڈٹ رپورٹ جاری کردی۔ اس حوالے سے ایگزیکٹو ڈائریکٹر یوتھ ویلفئرینگربلڈڈونر ایسوسی ایشن؛ جہانزیب جانی میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئت بتایا کہ سی پی ڈی آئی مقامی سما جی تنظیموں کیاشتراک سے مسلسل ایسی کا وشوں میں مصروف ہے جس سے شہریوں کو زیادہ سے زیادہ ذمہ دار بنایا جا سکے اور شفافیت،احتساب اور سماجی جواب دہی جیسی اقدارکو فروغ مل سکے گا۔ انہوں نے کہاکہ فزیکل آڈٹ سے مراد یہ ہے کہ ترقیاتی اسکیم کیمقام پر جا کر پیش رفت کو جانچا جا سکے اوراس بات کا اندازہ لگایا جا سکے کہ حکومت اپنی ترقیاتی اسکیموں کی تکمیل کے لئے کس قدر سنجیدگی اور تیزی سے کام کر رہی ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ ترقیاتی اسکیموں کافزیکل آڈٹ پا کستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ سی پی ڈی آئی نے کیا، جس میں شہریوں اور مقامی سماجی تنظیموں کو بھی شامل کیا گیا۔ خیبر پختونخواہ کی صوبائی حکومت کی جانب سے سالانہ مالی سال کا بجٹ جاری کیا جاتا ہے جس میں ایک بڑی تعداد میں ضلعی سطح پر ترقیاتی اسکیمیں پیش کی جاتی ہیں۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی جانب سیمالی سال 2019-20کیبجٹ میں ہنگو کیلیے پیش کر دہ پرانی اور جاری تر قیاتی سکمیں نومبر 2019تک کتنا کام ہوا ہے۔اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ ہنگو میں فزیکل آڈٹ کی مشق کے دوران یہ با ت سامنے آئی کہ ڈسٹرکٹ ہنگو میں صحت کے شعبے کے فروغ،استحکام اور عوامی مسائل کے حل کیلیے ترقیاتی بجٹ 2019-20میں کوئی بجٹ مختص نہیں کیا گیا اور نئی یا گزشتہ سالوں میں پیش کی گئی کوئی بھی ترقیاتی اسکیم جاری نہیں۔ جبکہ تعلیمی شعبے کے متعلق ڈسٹرکٹ ہنگو میں ماڈل اسکولوں کی تعمیر نامی ترقیاتی اسکیم کو فزیکل آڈٹ کے لئے منتخب کیا گیا۔ اس سلسلے میں مشاہداتی ٹیم نے ہنگو میں ماڈل اسکول کی تعمیر نامی ترقیاتی اسکیم اور واٹر سپلا ئی اسکیم کی تعمیر اور پانی کی تقسیم کے متعلق تعمیری مقام کا دورہ کرنے کا ارادہ کیا تا کہ پیشرفت کے بارے میں جائزہ لیا جا سکے۔لیکن سرکا ری اداروں میں جواب دہی اور احتساب کا کلچرعا م نہ ہونے کے باعث مشاہداتی ٹیم سائٹ کا دورہ اورفزیکل آڈٹ نہیں کر سکی۔ یہ بات زیرِغور ہے کہ آرٹیکل 19-A اور خیبر پختو نخواہ معلوما ت کے حق کا قانون 2013 کے تحت عوام کو انکے ٹیکس کے پیسے کیدرست استعمال اور سرکاری اداروں کی کارکرگی کے بارے میں جاننے کا حق حاصل ہے۔جہانزیب جانی نے کہا کہ اس کوشش سے شہریوں کی بجٹ سے متعلقہ معلومات تک رسائی اور بجٹ احتساب کے رواج کوبھی فروغ ملے گا۔ امیدکی جاتی ہے کہ فزیکل آڈٹ یعنی منصوبوں کی تکمیل پر پیشرفت کو جانچنے کی یہ مشق پا کستانی شہری بطور ٹیکس دہند گان جاری رکھیں گے۔

مزید : صفحہ اول