کے پی کے میں جن وزرا کو برطرف کیاگیا وہ دراصل یہ کام کرنے جارہے تھے، شوکت یوسفزئی نے بڑا دعویٰ کردیا

کے پی کے میں جن وزرا کو برطرف کیاگیا وہ دراصل یہ کام کرنے جارہے تھے، شوکت ...
کے پی کے میں جن وزرا کو برطرف کیاگیا وہ دراصل یہ کام کرنے جارہے تھے، شوکت یوسفزئی نے بڑا دعویٰ کردیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے دعویٰ کیاہے کہ شہرام اور عاطف خان صوبے میں متوازی حکومت قائم کرنا چاہ رہے تھے جس کی وجہ سے انہیں عہدوں سے ہٹایا گیا ہے۔

ہم نیوزکے پروگرام ’بڑی بات‘ میں میزبان عادل شاہزیب سے گفتگوکرتے ہوئے ان کاکہناتھاکہ عاطف خان اور شہرام کے ساتھ معاملات کافی عرصے سے خراب تھے۔ انہوں نے کہا یہ بات بھی غلط ہے کہ ان کا مو قف نہیں سناگیا، وزیراعظم نے بار باران کی بات سنی لیکن اب جبکہ متوازی حکومت چلانے کی کوششیں عروج پر پہنچیں تو عمران کو مجبوراً سخت فیصلہ کرنا پڑا۔

صورتحال میں بہتری کے حوالے سے کئے گئے ایک سوال کے جواب میں شوکت نے کہاکہ عاطف خان، شہرام اور شکیل خان پی ٹی آئی کے ممبران ہیں،ان کے وزیراعلیٰ کے پی کے ساتھ بہت اچھے تعلقات ہیں لیکن ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنے پر ان کے خلاف کارروائی ہو گی۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ وزیراعلیٰ کے بھائی اور چیف سیکرٹری پر بدعنوانی کے الزامات بے بنیاد ہیں، سینئر وزرا کے خلاف کارروائی سے دوسرے صوبے کے لوگوں کو بھی پیغام پہنچا ہے۔

یادرہے26جنوری کو خیبر پختون خوا میں سینئر وزیر عاطف خان سمیت تین وزرا کو عہدوں سے فارغ کردیا گیا ہے۔گورنر کے پی شاہ فرمان نے صوبائی وزیرسیاحت عاطف خان، وزیر صحت شہرام ترکئی اورصوبائی وزیر ریونیو شکیل خان کو عہدوں سے سبکدوش کردیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد /خیبرپختون خواہ /پشاور