ایک اہم عرب ملک کے وزیراعظم نے استعفیٰ دے دیا

ایک اہم عرب ملک کے وزیراعظم نے استعفیٰ دے دیا
ایک اہم عرب ملک کے وزیراعظم نے استعفیٰ دے دیا

  



دوحہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)عرب ملک قطر کے وزیراعظم شیخ عبداللہ بن ناصر بن خلیفہ نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے جسے امیر قطر شیخ تمیم بن حماد الثانی نے منظور کرلیا ہے۔

قطری ٹی وی الجزیرہ کی ایک رپورٹ کے مطابق امیر قطر نے شاہی فرمان جاری کرتے ہوئے شیخ عبداللہ بن ناصر بن خلیفہ کی جگہ شیخ خالد بن خلیفہ بن عبدالعزیز الثانی کو نیا وزیراعظم نامزد کیاہے۔وزارت داخلہ کا قلمدان بھی شیخ خالد بن خلیفہ کے پاس رہے گا۔

شیخ خالد نے ایک تقریب کے دوران امیر قطر کے سامنے اپنے عہدے کا حلف اٹھالیاجبکہ اس موقع پر نائب امیر شیخ عبداللہ بن حماد الثانی بھی موجود تھے۔

العربیہ اردو کے مطابق نئے وزیراعظم خالد بن خلیفہ بن عبد العزیز آل ثانی نے 11 نومبر 2014 کو شاہی دیوان کے سربراہ کا منصب سنبھالا تھا۔ اس سے قبل وہ شیخ تمیم کے اقتدار سنبھالنے کے وقت سے ا±ن کے دفتر کے ڈائریکٹر کے عہدے پر اپنی ذمے داریاں انجام دے رہے تھے۔خالد بن خلیفہ 1968 میں دوحہ میں پیدا ہوئے اور انٹرمیڈیٹ تک تعلیم قطری دارالحکومت میں ہی حاصل کی۔ بعد ازاں انہوں نے 1993 میں امریکا سے بزنس ایڈمنسٹریشن میں گریجویشن کی۔

خالد بن خلیفہ نے عملی کیرئر کی ابتدا قطر ایل پی جی لمیٹڈ کمپنی سے کی۔ وہ 2002 تک وہاں کام کرتے رہے۔ اس کے بعد شیخ خالد وزیراعظم کے نائب اول کے دفتر میں ذمے داریاں انجام دینے کے لیے منتقل کر دیے گئے۔ یہاں انہوں نے 2002 سے 2006 تک کام کیا۔

مارچ 2006 میں شیخ خالد ا س وقت کے ولی عہد تمیم بن حمد کے دفتر میں شاہی بیورو سے منسلک ہو گئے۔ انہیں 11 جولائی 2006 کو شیخ تمیم کے پرسنل سکریٹری کے دفتر کا سربراہ مقرر کیا گیا۔ بعد ازاں 9 جنوری 2007 کو انہوں نے اس وقت کے ولی عہد شیخ تمیم بن حمد کے دفتر کے ڈائریکٹر کا عہدہ سنبھالا۔

مزید : بین الاقوامی /عرب دنیا