چھابڑی فروشوں کیلئے لائسنس ضروری قرار،مگر فیس کتنی ہوگی؟خبرآگئی

چھابڑی فروشوں کیلئے لائسنس ضروری قرار،مگر فیس کتنی ہوگی؟خبرآگئی
چھابڑی فروشوں کیلئے لائسنس ضروری قرار،مگر فیس کتنی ہوگی؟خبرآگئی

  



اسلاام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)گلیوں اوربازاروں میں سبزیاں پھل یا دیگر چھوٹی موٹی اشیا سر پر رکھ بیچنے والے چھابڑی فروشوں کی آمد ن پر بھی حکومتی نظر پڑ گئی۔وفاقی حکومت نے چھابڑی فروشوں کو رجسٹرڈ کرنے کااعلان کرتے ہوئے ان کیلئے فیسیں بھی مقرر کردیں۔

نجی ٹی وی چینل آج نیوز کے مطابق وفاقی حکومت نے ایک مسودہ تیارکیا ہے جس کے تحت چھابڑی فروشوں کو رجسٹرڈ کیاجائے گا اور انہیں لائسنس لینے کا پابند کیا جائے گا۔ حکومت لائسنس کے بعد ان چھابڑی والوں سے پانچ سو روپے ماہانہ فیس بھی وصول کرے گی۔مسودے میں واضح کیا گیا ہے کہ یہ لائسنس پانچ سال تک کیلئے ہو گا اور اسے کسی دوسرے کو ٹرانسفر نہیں کیاجاسکے گااور نہ ہی چودہ سال سے کم عمر کوئی بچہ یہ کام نہیں کرسکے گا۔

بلدیاتی حکومت چھابڑی فروش کا علاقہ بدل سکے گی، عمل نہ کرنے پر سامان ضبط کرنے کی مجاز ہوگی۔

مسودے کے متن میں کہا گیاہے کہ نقل مکانی پر رضامندی کی صورت میں بلدیاتی عملہ سامان اور نقصان اداکرنے کا پابند ہے۔مسودے میں بے جا تنگ کرنے والے بلدیاتی حکومتی عملہ کیلئے بھی سزا کی تجویز کی گئی ہے، کسی وجہ کے بغیر اشیاضبط کرنے پر متعلقہ اہلکار کو 20 ہزار جرمانہ ہو گا، چھابڑی فروش کی اشیاءضبط کرنا قابل ضمانت جرم ہوگا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد