زندگی میں کوئی بڑا فیصلہ کرتے وقت کیا کھانا چاہیے؟ آپ بھی جانئے

زندگی میں کوئی بڑا فیصلہ کرتے وقت کیا کھانا چاہیے؟ آپ بھی جانئے
زندگی میں کوئی بڑا فیصلہ کرتے وقت کیا کھانا چاہیے؟ آپ بھی جانئے

  



ایڈنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) زندگی میں بڑا فیصلہ کرتے وقت بھوک اور کھانے کے متعلق سائنسدانوں نے ایک ایسی بات بتا دی ہے کہ سن کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطاق سکاٹ لینڈ کی یونیورسٹی آف ڈنڈی کے شعبہ نفسیات کے ماہرین نے نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ زندگی میں کوئی بڑا فیصلہ اس وقت کبھی نہیں کرنا چاہیے جب آپ خالی پیٹ ہوں۔ بھوک کی حالت میں انسان بہت کم پر قناعت کر لیتا ہے اور اگر اس کا پیٹ بھرا ہوا ہو تو وہ بڑا مقصد سامنے رکھتا ہے۔ اس کے علاوہ اس کی سائنسی وجہ بھی ہے اور وہ یہ کہ سروٹونین نامی ہارمون انسان کا موڈ مستحکم رکھنے اور خوشی کا احساس دلانے کا کام کرتا ہے۔

بھوک کی حالت میں اس کی مقدار جسم میں کم ہوتی ہے جس سے انسان جارح مزاج ہو جاتا ہے اور درست فیصلہ نہیں کر سکتا۔اس تحقیق میں سائنسدانوں نے 50مردوخواتین پر تجربات کیے۔ نتائج میں سائنسدانوں نے بتایا کہ جب آپ کوئی بڑا فیصلہ کرنے جا رہے ہوں تو آپ کو ایسی چیزیں کھانی چاہئیں جن میں امائنو ایسڈ بھرپور مقدار میں پایا جاتا ہو۔ اس کے لیے گوشت، چکن سوپ، چاکلیٹ، خشک میوہ جات، مچھلی اور کیلابہترین غذائیں ہیں۔ یہ چیزیں کھانے سے آپ کا موڈ بہتر ہو گا اور آپ کا پیٹ بھرا ہو گا چنانچہ آپ میں فیصلہ کرنے کی صلاحیت بہتر ہو گی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس