ہیپا ٹائٹس کی روک تھام کیلئے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا،ڈاکٹر اسرار الحق

ہیپا ٹائٹس کی روک تھام کیلئے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا،ڈاکٹر اسرار الحق

لاہور(جنرل رپورٹر)ہیپاٹائٹس کے عالمی دن کے موقع پر لاہور جنرل ہسپتال کے ایسوسی ایٹ پروفیسر آف میڈیسن ڈاکٹر اسرار الحق طور نے کہا ہے کہ ہم سب کو اس موذی مرض کے خاتمے اور اس کے پھیلاؤ کو روکنے کے عزم کی تجدید کرنا ہوگی ، ملک بھر میں12ملین افراد ہیپاٹائٹس بی اور سی کا شکار ہیں اور مصر کے بعد پاکستان اس مرض کا شکار دنیا بھر میں دوسرا بڑا ملک ہے جہاں ہر چھٹا مریض ہیپاٹائٹس سی اور ہر تیسرا شخص ہیپاٹائٹس بی کا شکار دکھائی دیتا ہے ، ورلڈ ہیپاٹائٹس ڈے ہر سال 28جولائی کو دنیا بھر میں منایا جاتا ہے۔

تاکہ لوگوں میں اس مرض کے بارے میں شعور بیدار کیا جا سکے ۔ڈاکٹر اسرار الحق طور نے کہا کہ روز افزوں ہونے والی ترقی اور جدید طبی تحقیق سے ہیپاٹائٹس بی کا علاج کافی حد تک آسان ہو چکا ہے اور اس کی ادویات موثر اور انتہائی کم قیمت ہیں جن کے باقاعدہ استعمال سے تین سے چھ ماہ میں مرض سے نجات ملتی ہے ،مزید برآں یہ ادویات جگر کے سکڑنے کی بیماری میں بھی کار آمد ہیں اور ہر مرحلے پر وائرس کو ختم کرنے کی صلاحیت رکھتی ہیں ،انہوں نے کہا کہ ہیپاٹائٹس بی کی ویکسین بھی دستیاب ہے جو کہ95فیصد مریضوں میں مدافعت مہیا کرتی ہے ۔ڈاکٹر اسرار الحق طور نے کہا کہ ہیپاٹائٹس کے مرض کے پھیلاؤ کو روکنا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے جس کیلئے غیر ضروری ٹیکے لگوانے ،دندان ساز اور دیگر آلات جراحی کا صاف ہونا بغیر تصدیق شدہ خون لگوانے سے پرہیز اور حجام /پارلر پر نئے اوزار اور بلیڈ استعمال کروانا اہم ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1