لوکل چیز کے فنڈز ختم ، ہسپتالوں میں مفت علاج معالجہ مکمل طور پر بند

لوکل چیز کے فنڈز ختم ، ہسپتالوں میں مفت علاج معالجہ مکمل طور پر بند

لاہور(جاوید اقبال )صوبائی دارالحکومت کے ہسپتالوں میں ادویا ت کی خریداری کے لئے لوکل پرچیز (ایل پی) کے فنڈز ختم ہوگئے ہیں جس سے ہسپتالوں میں زیرعلاج مریضوں کو مفت علاج معالجہ اور ادویات کی فراہمی مکمل طور پر بند ہوگئی ہے۔ مالی سال کے فنڈز ہسپتالوں کو دیئے گئے ہیں اور نہ ہی ایل پی کے نئے کنٹریکٹ جاری کئے گئے ہیں ۔اس صورتحال سے 90 فیصد مریض رل گئے ہیں اور انہیں ہسپتالوں سے ڈسپرین اور سرنج تک میسر نہیں رہی ،بتایا گیا ہے کہ ہسپتال فنڈز نہ ہونے سے لوکل پرچیز میں ادویات فراہم کرنے والی کمپنیوں کو واجبات کی ادائیگی نہیں کرسکے جس کے باعث کمپنیوں نے ہسپتالوں کو ایل پی میں ادویات کی سپلائی بند کردی ہے ۔2ماہ قبل ہسپتالوں نے ایل پی کی ادویا ت میں 70فیصد کا کٹ لگادیا اور خریداری بند کردی ،اب فنڈز ختم ہونے سے 95فیصد ایل پی سے ادویات کی خریداری بند کردی ہے جس سے مریضوں کو پریشانی کا سامناہے ،یہاں تک کہ کینسر ،ہیپاٹائٹس ،گردوں کی پیوندکاری کے مریضوں کو بھی ایل پی سے ادویات کی فراہمی روک دی گئی ہے جس سے ان مریضوں کی زندگیاں خطرات سے دوچار ہو گئی ہیں ،یہی حال ڈی ایچ کیوز کا ہے وہاں 100فیصد ایل پی کی ادویات بند کردی گئی ہیں ،اس حوالے سے سیکرٹری صحت ثاقب ظفر سے بات کی گئی تو انہوں نے کہاکہ فنڈز خزانہ نے جاری کرنے ہیں ،امید ہے کہ جلد ہی فنڈز جاری کردیئے جائیں گے تاہم کسی ہسپتال کی انتظامیہ ایسی مریض جنہیں مفت علاج معالجہ کی ضرورت ہے ان کے علاج کے لئے ادویات کی فراہمی نہیں روک سکتی ،اس کی تحقیقات کرائی جائیں گی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1