لاہور کے 22مقامات پر پٹرول پمپوں کیلئے مختص اراضی کی نیلامی کا حکم

لاہور کے 22مقامات پر پٹرول پمپوں کیلئے مختص اراضی کی نیلامی کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس ثاقب نثار، جسٹس عمر عطاء بندیال اور جسٹس اعجاز الاحسن پر مشتمل بنچ نے لاہور کے 22مقامات پر ایل ڈی اے کی پیٹرول پمپوں کیلئے مختص اراضی کی پٹہ داری کی نیلامی کا حکم دے دیا ہے تاہم اس نیلامی کی منظوری عدالتی فیصلے سے مشروط ہوگی ۔فاضل بنچ نے دوران سماعت یہ بھی واضح کیا کہ موجودہ پٹہ دار آئل کمپنیاں اور پیٹرول پمپ مالکان اس اراضی کی نیلامی میں سب سے زیادہ بولی کے برابر رقم ادا کرنے پر رضا مند ہوں تو لیز پرپہلا حق ان کا ہوگا۔موجودہ پیٹرول پمپ مالکان یا متعلقہ آئل کمپنیاں سب سے زیادہ بولی کے مساوی رقم ادا کرکے یہ اراضی اپنے پاس رکھ سکتے ہیں۔چیف جسٹس پاکستان نے ایل ڈی اے کی اراضی پر قائم پیٹرول پمپوں کی لیز کے معاملہ پر ازخود نوٹس لے رکھا ہے ۔گزشتہ روز فاضل بنچ نے ایل ڈی اے حکام کو ہدایت کی کہ آج 28جولائی کو ان پیٹرول پمپوں کی اراضی کو لیز (پٹہ )پر دینے کے لئے نیلامی کی شرائط و ضوابط تیار کرکے منظوری کے لئے عدالت کو پیش کئے جائیں جس کے بعد 15روز کے اندر نیلامی کا عمل مکمل کرکے عدالت میں رپورٹ پیش کی جائے ،فاضل بنچ نے قراردیا کہ اس نیلامی کی حتمی منظوری عدالتی فیصلے سے مشروط ہوگی۔اس سے قبل عدالت کی طرف سے بنائی گئی کمیٹی کے سربراہ صوبائی وزیر قانون و ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے اپنی رپورٹ عدالت میں پیش کی اور فریقین کی تجاویز سے عدالت کو آگاہ کیا۔ایک موقع پر چیف جسٹس نے تجویز دی کہ موجودہ پٹہ داروں کے لئے اس اراضی کی لیز کامارکیٹ ریٹ پر تعین کیا جاسکتا ہے ،چیف جسٹس نے اس حوالے سے مزید کہا کہ ایک کنال کا 3لاکھ روپے کرایہ وصول کیا جائے تاہم ایل ڈی اے نے اس تجویز سے اتفاق نہیں کیاجس کے بعد چیف جسٹس نے اس اراضی کی لیز کے لئے نیلامی کی ہدایت جاری کردی ۔اس کیس کی مزید سماعت آج 28جولائی کو ہوگی ۔

پٹرول پمپ اراضی

مزید : صفحہ آخر